پیرا کھلاڑی دیپا ملک بنیں کھیل رتن

صدر كووند نے ریو پیرالمپک کی چاندی کا تمغہ فاتح پیرا کھلاڑی دیپا ملک کو جمعرات کو راشٹرپتی بھون کے دربار ہال میں منعقد ایک تقریب میں ملک کے اعلی ترین کھیل اعزاز راجیو گاندھی کھیل رتن سے نوازا۔

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی

یو این آئی

نئی دہلی: صدر رام ناتھ كووند نے ریو پیرالمپک کی چاندی کا تمغہ فاتح پیرا کھلاڑی دیپا ملک کو جمعرات کو راشٹرپتی بھون کے دربار ہال میں منعقد ایک تقریب میں ملک کے اعلی ترین کھیل اعزاز راجیو گاندھی کھیل رتن سے نوازا۔ تقریب میں راجیو گاندھی کھیل رتن، درون آچاریہ (ریگولر اور لائف ٹائم )، ارجن ایوارڈ، دھیان چند ایوارڈ، قومی کھیل حوصلہ افزائی ایوارڈ، تینزنگ نورگی قومی جرات ایوارڈ اور مولانا ابوالکلام آزاد (ایم اے کے اے ) ٹرافی پیش کی گئی۔

دیپا کے ساتھ عالمی نمبر ایک پہلوان بجرنگ کو کھیل رتن ملنا تھا لیکن عالمی چمپئن شپ کی تیاری کے لئے بیرون ملک میں اپنی ٹریننگ میں مصروف ہونے کی وجہ سے بجرنگ تقریب میں شامل نہیں ہو پائے۔ بجرنگ کو بعد میں یہ اعزاز پیش کیا جائے گا۔دیپا ملک پیرالمپك میں تمغہ جیتنے والی پہلی ہندستانی خاتون کھلاڑی ہیں۔ انہوں نے اب تک 58 قومی اور 23 بین الاقوامی تمغے جیتے ہیں۔ دیپا کو اس سے پہلے پدم شري اور ارجن ایوارڈ سے بھی نوازا جا چکا ہے۔ دیپا ویل چیئر پر جب یہ اعزاز لینے پہنچی تو صدر نے خود اپنی جگہ سے آگے آکر انہیں یہ ایوارڈ پیش کیا۔ اس وقت مکمل دربار ہال تالیوں کی گڑگڑاہٹ سے گونج رہا تھا۔

راجیو گاندھی کھیل رتن ایوارڈ میں دیپا ملک کو میڈل، سند کے علاوہ ساڑھے سات لاکھ روپے کا نقد انعام دیا گیا۔ ارجن، درون آچاریہ اور دھیان چند ایوارڈ فاتحین کو تماثیل ، سرٹیفکیٹ اور پانچ پانچ لاکھ روپے کا نقد انعام دیا گیا۔ہندستانی کرکٹر رویندر جڈیجہ ویسٹ انڈیز کے دورے میں مصروف ہونے کی وجہ سے تقریب میں شامل نہیں ہو سکے۔ انہیں ارجن ایوارڈ بعد میں فراہم کیاجائے گا۔ اس سال کل 19 کھلاڑیوں کو ارجن ایوارڈ کے لئے منتخب کیا گیا تھا جن میں سے 18 کھلاڑیوں نے صدر کے ہاتھوں اپنا ارجن ایوارڈ قبول کیا۔ تقریب میں مرکزی وزیر کھیل كرن ریجیجو بھی موجود تھے۔

خاتون کرکٹر پونم یادو، کھلاڑی تجندر پال سنگھ تور، محمد انس اور سوپنا برمن، کبڈی کھلاڑی اجے ٹھاکر، موٹر ریسر گورو سنگھ گل، خاتون پہلوان پوجا ڈھاڈا، پولو کھلاڑی سمرن سنگھ شیر گل، گھڑ سوار فواد مرزا نے صدر کے ہاتھوں اپنا ارجن ایوارڈ لیا۔ہندستانی بیڈمنٹن ا سٹار سائنا نہوال کے کوچ رہے ومل کمار کو ریگولر درون آچاریہ ایوارڈ دیا گیا۔ دولت مشترکہ کھیلوں میں چار تمغے جیتنے والی ٹیبل ٹینس کھلاڑی منیكا بترا کے بچپن کے کوچ سندیپ گپتا کو بھی درون آچاریہ ایوارڈ دیا گیا۔ سابق ہندستانی کرکٹر گوتم گمبھیر کے کوچ سنجے بھاردواج کو لائف ٹائم کلاس میں درون آچاریہ ایوارڈ سے نوازا گیا۔ درون آچاریہ ایوارڈ کے باقاعدہ اور لائف ٹائم زمروں میں تین تین کوچز کو یہ اعزاز دیا گیا۔

پیرا بیڈمنٹن کھلاڑی پرمود بھگت کو دیپا ملک کے بعد سب سے زیادہ تالیاں ملیں۔ صدر نے انہیں ارجن ایوارڈ سے نوازا۔ کھیل رتن کے بعد درون آچاریہ اور پھر ارجن ایوارڈ پیش کئے گئے۔ ارجن ایوارڈ کے بعد لائف ٹائم دھیان چند ایوارڈ پیش کئے گئے۔چھ افراد کو ایڈونچر سرگرمیوں کے لئے تینزنگ نورگی قومی جرات ایوارڈ پیش کئے گئے۔ نوجوان نشانےبازوں اور صلاحیتوں کو تراشنے کے لئے گگن نارنگ اسپورٹس پروموشن فاؤنڈیشن کو قومی کھیل حوصلہ افزائی ایوارڈ دیا گیا۔

کھیل رتن سے سرفراز ہو چکے ہندستانی شوٹر گگن نارنگ اپنے فاؤنڈیشن کے لئے یہ ایوارڈ لینے خود موجود تھے۔ نارنگ کی شاگردہ ایلاوینل ولاروان نے برازیل کے دارالحکومت ریو ڈی جینرو میں سال کے چوتھے اور آخری آئی ایس ایس ایف عالمی کپ رائفل / پسٹل ٹورنامنٹ میں خواتین کی 10 میٹر ایئر رائفل مقابلے میں آج ہی طلائی تمغہ جیتا۔چنڈی گڑھ واقع پنجاب یونیورسٹی مولانا ابوالکلام آزاد (ایم اے کے اے ) ٹرافی سے نوازا گیا۔ قومی کھیل حوصلہ افزائی ایوارڈ فاتح کو ٹرافی اور سند پیش کی گئی۔ پنجاب یونیورسٹی کو ایم اے کے اے ٹرافی، 10 لاکھ روپے کی انعامی رقم اور سرٹیفکیٹس دیا گیا۔ تینزنگ نورگی قومی جرات ایوارڈ میں مجسمہ، سرٹیفکیٹ اور پانچ لاکھ روپے کی نقد رقم فراہم کی گئی۔

ایوارڈ کے فاتحین کی فہرست:

  • راجیو گاندھی کھیل رتن: بجرنگ پنیا (کشتی) اور دیپا ملک (پیرا ایتھلیٹکس)
  • درون آچاریہ ایوارڈ (ریگولر ): ومل کمار (بیڈمنٹن)، سندیپ گپتا (ٹیبل ٹینس) اور مہندر سنگھ ڈھلوں (ایتھلیٹکس)
  • درون آچاریہ ایوارڈ (لائف ٹائم ): مرجبان پٹیل (ہاکی)، رام بير سنگھ کھوکھر (کبڈی) اور سنجے بھاردواج (کرکٹ)
  • ارجن ایوارڈ: تجندر پال سنگھ تور (ایتھلیٹکس)، محمد انس یحیی(ایتھلیٹکس)، ایس بھاسكرن (باڈی بلڈنگ )، سونیا لاتھر (باکسنگ)، رویندر جڈیجہ (کرکٹ)، پونم یادو (کرکٹ)، چگلنسانا سنگھ كگجم (ہاکی)، اجے ٹھاکر (کبڈی)، گورو سنگھ گل (موٹر اسپورٹس)، پرمود بھگت (پیرا اسپورٹس بیڈمنٹن)، انجم مدگل (نشانےبازی)، هرميت راجل دیسائی (ٹیبل ٹینس)، پوجا ڈھاڈا (کشتی)، فواد مرزا ( گھڑ سواری )، گرپريت سنگھ سندھو (فٹ بال)، سوپنا برمن (ایتھلیٹکس)، سندر سنگھ گوجر (پیرا اسپورٹس ایتھلیٹکس)، بھیم ديپتی سائی پرنيت (بیڈمنٹن) اور سمرن سنگھ شیر گل (پولو)
  • دھیان چند ایوارڈ: مینوئل فریڈركس (ہاکی)، اروپ بساك (ٹیبل ٹینس)، منوج کمار (کشتی)، نتن كيرتنے (ٹینس) اور سی لالریمساگا (تیر اندازی)
  • قومی کھیل فروغ ایوارڈ: گگن نارنگ اسپورٹس پروموشن فاؤنڈیشن اور گو ااسپورٹس اور رائل سیما ڈیولپمنٹ ٹرسٹ
  • مولانا ابوالکلام آزاد (ایم اے کے اے ) ٹرافی: پنجاب یونیورسٹی چنڈی گڑھ
  • تینزنگ نورگی قومی جرات ایوارڈ: ارپنا کمار (لینڈ ایڈوینچر )، آنجہانی دیپانکر گھوش (لینڈ ایڈوینچر )، مكندن کے (لینڈ ایڈوینچر )، پربھات راجو کولی (واٹر ایڈوینچر )، رامیشور جانگڑا (ائیر ایڈوینچر )، واگچك شیرپا (لائف ٹائم اچیومنٹ )