دہلی ہاف میراتھن میں ایتھوپیا کا ڈبل خطاب

خواتین زمرے میں یہوالاو نے 64 منٹ 46 سیکنڈ میں اپنی ریس مکمل کی، جو اس ہاف میراتھن کی تاریخ کا دوسرا تیز ترین وقت ہے۔ انہیں انعامی رقم کے طور پر 27000 ڈالر ملے۔

تصویر آئی اے این ایس
تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

نئی دہلی: ایتھوپیا کے رنرز نے دہلی ہاف میراتھن کے 16 ویں ایڈیشن میں ایک بار پھر اپنی برتری ثابت کرتے ہوئے ڈبل خطاب اپنے نام کرلیا۔ اتوار کو جواہر لال نہرو اسٹیڈیم میں منعقدہ اس پروقار ہاف میراتھن میں ایتھوپیا کے ایم ڈیورک ویلے لیگن نے مردوں کا خطاب اپنے نام کیا جبکہ ایتھوپیا کی یالم زرف یہوالاو نے خواتین کے زمرے میں دوسری تیز ترین کامیابی حاصل کی۔

دہلی ہاف میراتھن میں ایتھوپیا کا ڈبل خطاب
دہلی ہاف میراتھن میں ایتھوپیا کا ڈبل خطاب

کورونا کے دور میں دہلی ہاف میراتھن کا انعقاد صرف ایلیٹ انٹرنیشنل اور ہندوستانی رنرز کے ساتھ ہوا۔ اس بار دہلی ہاف میراتھن میں تقریباً 50 رنرز نے حصہ لیا۔ نہرو اسٹیڈیم سے شروع ہوکر نہرو اسٹیڈیم میں اختتام پذیر ہوئی اس دوڑ کی سب سے خاص بات 21 سالہ یہوالاو کی زبردست کارکردگی تھی۔


گزشتہ ماہ ورلڈ ایتھلیٹکس ہاف میراتھن چمپئن شپ میں تیسرے نمبر پر آنے والی یہوالاو نے 64 منٹ 46 سیکنڈ میں ریس مکمل کی جو اس ہاف میراتھن کی تاریخ کا دوسرا تیز ترین وقت ہے۔ انہیں انعامی رقم کے طور پر 27000 ڈالر ملے۔ اس کے علاوہ انہیں 10000 ڈالر ریکارڈ بونس کے طور پر بھی ملے۔ خواتین کے زمرے میں کینیا دوسرے اور ایتھوپیا تیسرے نمبر پر رہا۔

مردوں کے زمرے میں ویلے لیگن نے دو بار کے چیمپیئن اور ہم وطن آندملاک بیلہو کو ایک معمولی فرق سے شکست دے کر پہلا مقام حاص کیا ۔ ویلے لیگن نے 58 منٹ 53 سیکنڈ میں دوڑ پوری کی جبکہ بیلہو نے 58 منٹ 54 سیکنڈ کا وقت لیا۔ مردوں کے زمرے میں ایتھوپیا دوسرے اور یوگاڈا تیسرے نمبر پر رہا۔ ویلے لیگن کو 27 ہزار ڈالر کی انعامی رقم ملی۔


ہندوستان کے اویناش سابلے نے 60 منٹ 30 سیکنڈ کا شاندار وقت نکالا اور قومی ریکارڈ توڑتے ہوئے مردوں کے زمرے میں 10 ویں نمبر پر رہے۔ اویناش ہندوستانیوں میں فاتح بنے۔ انہیں ہندوستانیوں میں فاتح ہونے پر ساڑھے تین لاکھ روپے کی انعامی رقم اور ایک لاکھ روپے کا ریکارڈ بونس ملا۔

خواتین کے زمرے میں ورلڈ ریکارڈ میراتھن ریکارڈ یافتہ اور حالیہ لندن میراتھن کی فاتح بریگیڈ کوسیگی بدقسمتی سے 8 کلومیٹر کے بعد لڑکھڑاتے ہوئے سڑک کے کنارے چلی گئیں اور دوڑ سے باہر ہوگئیں۔ خواتین کے زمرے میں کینیا کی روتھ چیپناگیٹچ 65 منٹ 06 سیکنڈ کے ساتھ دوسرے اور ایتھوپیا کی ابابل یشنیہ 65 منٹ 21 سیکنڈ کے ساتھ تیسرے نمبر پر رہیں۔


مردوں کے زمرے میں رنرز نے 60 منٹ سے بھی کم وقت اور تین رنرز نے 59 منٹ سے بھی کم وقت لیا۔ تینوں رنرز نے تقریباً56 منٹ میں 20 کلو میٹر کا فاصلہ طے کیا، لیکن اس کے بعد ویلے لیگن نے غضب کی دوڑ لگائی اور بیلہو کو آخری لمحات میں پیچھے چھوڑکر خطاب اپنے نام کرلیا۔

ویلے لیگن نے 58:53 منٹ میں فنش لائن عبور کی جو سال کا تیسرا تیز ترین وقت ہے۔ بیلہو نے 58:54 منٹ میں دوسرے اور یوگانڈا کے اسٹیفن کسا نے 58:56 منٹ میں تیسری پوزیشن حاصل کی۔ بیلہو اور کسا نے اپنا ذاتی بہترین وقت لیا۔


کورونا کے اس مشکل وقت میں اس بار دنیا کے تقریباً 13500 لوگوں نے دہلی ہاف میراتھن 2020 میں حصہ لیا۔ اس نے تین زمروں میں حصہ لیا۔ اس میں تین زمروں میں دوڑ ہوئی جس میں ہاف میراتھن (21.097 کلومیٹر)، اوپن 10 کے (10 کلومیٹر) اور گریٹ دہلی رن (پانچ کلومیٹر) شامل ہیں۔ ایلیٹ رنرز نہرو اسٹیڈیم سے دوڑے جبکہ دنیا بھر سے ہزاروں رنرز ایئرٹیل دہلی ہاف میراتھن کے خصوصی موبائل ایپ کے ذریعے دوڑ میں شامل ہوئے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔