کامن ویلتھ گیمز 2022: سندھو کے بعد لکشیہ سین نے بھی کیا کمال، حاصل کیا طلائی تمغہ

کامن ویلتھ گیمز میں ہندوستان کے حصے میں اب تک 22 طلائی، 15 نقرئی اور 23 کانسے کے تمغے آ چکے ہیں، اس سے قبل ہندوستان کی پی وی سندھو نے آج ہی فائنل میں کناڈا کی مشیل لی کو ہرا کار طلائی تمغہ جیتا تھا۔

لکشیہ سین، تصویر سوشل میڈیا
لکشیہ سین، تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

ہندوستان کا کامن ویلتھ گیمز میں شاندار مظاہرہ جاری ہے۔ ویٹ لفٹنگ، کشتی کے بعد اب ہندوستانی بیڈمنٹن اسٹارس نے کمال کر دیا۔ پی وی سندھو کے بعد بیڈمنٹن اسٹار لکشیہ سین نے کامن ویلتھ گیمز 2022 کے بیڈمنٹن سنگلز فائنل میں ملیشیا کے تجے ینگ کو شکست دے کر طلائی تمغہ اپنے نام کیا ہے۔

لکشیہ سین نے پہلا گیم ہارنے کے بعد زوردار جوابی حملہ کیا اور ملیشیا کے تجے ینگ کو 21-19، 9-21، 16-21 سے شکست دے دی۔ یہ کامن ویلتھ گیمز 2022 میں ہندوستان کا 22واں طلائی تمغہ ہے۔ علاوہ ازیں بیڈمنٹن میں آج ہندوستان نے دوسرا طلائی تمغہ حاصل کیا ہے۔ قابل ذکر ہے کہ کامن ویلتھ گیمز 2022 میں ہندوستان کے پاس اب تک 22 طلائی، 15 نقرئی اور 23 کانسے کا تمغہ جمع ہو چکا ہے۔


اس سے قبل ہندوستان کی پی وی سندھو نے آج ہی سیدھے گیم میں فائنل میں کناڈا کی مشیل لی کو ہرا کر کامن ویلتھ گیمز کے بیڈمنٹن مقابلے میں اپنا پہلا سنگلز طلائی تمغہ جیتا۔ سندھو نے جارحانہ کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوئے گیمز کو اچھی طرح کنٹرول کیا اور اپنے حریف کو زیادہ مواقع نہیں دیے۔ انھوں نے این ای سی میں شو کورٹ میں فائنل میں 15-21، 13-21 سے جیت حاصل کی۔ جیت کے بعد سندھو نے کہا کہ ’’میں طویل مدت سے اس طلائی تمغہ کا انتظار کر رہی تھی، اس لیے میں بہت خوش ہوں۔‘‘

مکسڈ ٹیم مقابلے میں نقرئی تمغہ جیتنے کے بعد سندھو کا برمنگھم کامن ویلتھ گیمز میں یہ دوسرا تمغہ ہے۔ انھوں نے گولڈ کوسٹ میں مکسڈ ٹیم میں طلائی اور نقرئی جیتا تھا۔ شروعاتی گیم میں 4-4 کے اسکور سطح کے ساتھ زوردار مقابلہ ہوا۔ اپنے قد اور اسمیش کا استعمال کرتے ہوئے سندھو نے 8-14 سے سبقت بنا لی اور آخر میں شروعاتی گیم 15-21 سے جیت لیا۔ دوسرا گیم بھی اس طرز پر چلا، جب سندھو نے 6-11 کی شروعاتی سبقت لے لی اور مشیل لی نے کچھ زیادہ جارحانہ طریقے سے کھیلنا شروع کیا، لیکن سندھو نے ان پر 13-19 سے دباؤ بنایا۔ اس کے بعد ہندوستانی شٹلر نے چمپئن شپ پوائنٹ اور طلائی تمغہ اپنے نام کر لیا۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔