پليز، تھينکس اور سوری، پوپ کا شادی شدہ افراد کو مشورہ

پاپائے روم نے کرسمس پر دنيا کے شادی شدہ جوڑوں کو ايک خصوصی تحفہ ديا۔ ان کے مطابق وبا کا دور ديگر افراد کے ساتھ شادی شدہ جوڑوں کے ليے بھی انتہائی مشکل رہا اور ايسے ميں مسائل کا حل تلاش کرنا ضروری ہے۔

فائل تصویر آئی اے این ایس
فائل تصویر آئی اے این ایس
user

Dw

پوپ فرانسس نے کرسمس کے موقع پر شادی شدہ جوڑوں کو ايک خصوصی پيغام ديا ہے، 'پليز، تھينکس اور سوری‘ يعنی برائے مہربانی، شکريہ اور مجھے معاف کر دو کسی بھی شادی ميں اہم ترين الفاظ ہيں۔ انہوں نے شادی شدہ جوڑوں کے نام ايک خط لکھا، جس ميں يہ تسليم کيا کہ کورونا کی عالمی وبا شادی شدہ جوڑوں کے ليے مشکل ثابت ہوئی ہے جس ميں کئی قسم کے ازدواجی مسائل سامنے آئے۔ پوپ کا البتہ کہنا تھا کہ يہ وقت ہمت ہارنے کا نہيں بلکہ 'برائے مہربانی، شکريہ اور مجھے معاف کر دو‘ جيسے الفاظ استعمال کر کے اپنے رشتے کو سنوارنے کا ہے۔

پاپائے روم نے يہ خط مسيحی تہورا کرسمس کے موقع کی مناسبت سے تحرير کيا اور اسے آج اتوار 26 دسمبر کو جاری کيا گيا۔ اس دن يسوع مسيح کے خاندان کو ياد کيا جاتا ہے۔ پوپ فرانسس نے کوئی چھ ماہ قبل اس دن کی مناسبت سے ايک سالہ تقريبات کا اعلان کيا تھا، جسے اب تک چھ ماہ ہو چکے ہيں اور يہ تقريبات آئندہ برس جون ميں اختتام پذير ہوں گی۔


پاپائے روم نے کہا کہ يہ خط دنيا بھر کے شادی شدہ جوڑوں کے ليے ان کی طرف سے کرسمس کا تحفہ ہے۔ اٹلی ميں بچوں کی پيدائش کی تشويش ناک حد تک کم شرح کے تناظر ميں پوپ نے جوڑوں پر زور ديا کہ وہ بچے پيدا کريں۔ انہوں نے اپنے خط ميں ايک جگہ لکھا ہے، ''شايد ہم ميں سے کچھ بہترين اور مسائل سے بالاتر خاندانوں ميں پيدا نہيں ہوئے ليکن ہمارا خاندان ہماری کہانی ہے۔ يہ ہماری جڑيں ہے۔ اگر جڑيں کاٹ دی جائيں، تو زندگی ختم ہو جاتی ہے۔‘‘

کيتھولک مسيحيوں کے روحانی پيشوا نے مزيد لکھا ہے کہ لاک ڈاؤن اور قرنطينہ کی وجہ سے خاندان کافی زيادہ وقت ساتھ بتا رہے ہيں۔ ايسے ميں خاندان کے ارکان کے مابين اختلافات ابھرتے ہيں۔ متعدد مرتبہ پرانے تنازعات شدت پکڑ ليتے ہيں۔ ايسی صورتحال ميں کئی مرتبہ رشتے ٹوٹنے کی حد تک پہنچ جاتے ہيں۔ پوپ نے والدين کو ياد دلايا کہ خاندان کا ٹوٹنا بالخصوص بچوں کے ليے سب سے زيادہ نقصان دہ ہوتا ہے، جو اعتماد، طاقت، محبت اور استحکام کے ليے اپنے والدين کی طرف آنکھ اٹھا کر ديکھتے ہيں۔


پوپ فرانسس نے زور ديا کہ شادی شدہ جوڑے اپنے اختلافات دور کريں، کبھی دعاؤں کی مدد سے تو کبھی صلاح و مشورے سے۔ ان کا يہ بھی کہنا تھا کہ 'معاف کر دينا‘ ہر زخم بھر ديتا ہے۔ اسی کے ساتھ انہوں نے لکھا ہے کہ 'پليز، تھينکس اور سوری‘ کسی بھی شادی ميں سب سے اہم الفاظ ہيں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔