امریکا: کیمبرج کی پہلی مسلمان خاتون میئر کون ہیں؟

امریکی ریاست میسیچوسیٹس کے شہر کیمبرج میں پہلی مرتبہ ایک مسلمان اور پاکستانی نژاد امریکی خاتون میئر منتخب ہوئی ہیں۔

امریکا: کیمبرج کی پہلی پاکستانی نژاد خاتون میئر کون ہیں؟
امریکا: کیمبرج کی پہلی پاکستانی نژاد خاتون میئر کون ہیں؟
user

ڈی. ڈبلیو

اکتیس سالہ سُنبل صدیقی دو برس کی تھیں جب ان کے والدین کراچی سے امریکا منتقل ہو گئے تھے۔ ان کے والدین کو کیمبرج میں اپنی رہائش کے لیے ایسا علاقہ ڈھونڈنا تھا جو زیادہ مہنگا نہ ہو۔ ان کی قسمت اچھی تھی کہ انہوں نے ہاؤسنگ لاٹری جیتی اور کیمبرج کے شمالی علاقے میں سکون پذیر ہوئے۔ بعدازاں یہ خاندان مشرقی کیمبرج منتقل ہوگیا۔

اپنے تعلیمی کیرئیر کے دوران سنبل نے براؤن یونیورسٹی سے پبلک پالیسی کے شعبے سے گریجوئیشن کیا۔ انہوں نے بعد میں نارتھ ویسٹرن پریٹزکر اسکول آف لا سے قانون کی ڈگری حاصل کی۔

اس دوران سنُبل نے ''کیمبرج یوتھ انولومنٹ سب کمیٹی‘‘ کی بنیاد رکھی اور انہیں ''کیمبرج پیس اینڈ جسٹس ایوارڈ‘‘ سے نوازا گیا۔ اس سب کمیٹی کو اب کیمبرج یوتھ کونسل کہا جاتا ہے اور اس کے قیام کو پندرہ سال ہو چکے ہیں۔

سنبل نے بوسٹن کی ایک غیر سرکاری تنظیم 'ایمری کورپس' میں بھی خدمات سر انجام دیں جس کا کام لوگوں کو غربت سے نکلنے میں مدد فراہم کرنا ہے۔

کیمبرج کی ستتر ویں میئر منتخب ہونے کے موقع پر سُنبل نے اپنی تقریر میں کہا ، "میرے نزدیک ، میرے والدین کی کوششیں اور ہمت ایک مثال ہے ۔ یہاں کیمبرج میں اس طرح کی ان گنت کہانیاں ہیں۔ میں نے کیمبرج میں اپنے اردگرد ایسی ہی جدوجہد اور محنت کا ماحول پایا جس میں میں نے سیکھا کہ پڑوسی ہمارے وسیع تر خاندان کی طرح ہوتے ہیں اور ہماری زندگی ،حفاظت اور کامیابی ایک دوسرے سے منسلک ہے۔"