چندریان 3 چاند پر اترنے کے لیے تیار، ہندوستان تاریخ رقم کرنے سے ایک قدم دور

چاند مشن، چندریان 3 کامیابی کے ساتھ اپنے آخری مرحلے میں پہنچ گیا ہے اور چندریان لینڈر ماڈیول ( ایل ایم) 23 اگست کی شام 6.04 بجے چاند کے جنوبی قطبی علاقے پر اترے گا

<div class="paragraphs"><p>چندریان 3، تصویر&nbsp;<a href="https://twitter.com/isro">@isro</a></p></div>

چندریان 3، تصویر@isro

user

قومی آوازبیورو

چنئی: ہندوستانی چاند مشن چندریان-3 بدھ کو چاند پر اترنے کے لیے تیار ہے۔ چاند مشن، چندریان 3 کامیابی کے ساتھ اپنے آخری مرحلے میں پہنچ گیا ہے اور چندریان لینڈر ماڈیول ( ایل ایم) 23 اگست کی شام 6.04 بجے چاند کے جنوبی قطبی علاقے پر اترے گا۔

اب تک، مشن بالکل اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کر رہا ہے اور اب سب کی نظریں اس لینڈنگ پر ہیں جو اگر کامیاب ہو جاتا ہے، تو ہندوستان کو اقوام کے ایک ایلیٹ گروپ میں شامل کر دے گا جس میں امریکہ، روس اور چین شامل ہیں۔ اسرو کے سائنسدان نصف شب سے چندریان 3 مشن کی نگرانی کر رہے ہیں۔


واضح رہے کہ چندریان-3 کی لینڈنگ سے چند گھنٹے قبل، اسرو نے ایک سنگ میل حاصل کیا جب مدار میں لے جانے والے چندریان-2 نے کل چندریان-3 کا لینڈر ماڈیول ( ایل ایم) رسمی طور پر استقبال کیا گیا۔ چندریان -2 آربیٹر چندریان -3 لینڈر کے ساتھ اسرو کے لئے بیک اپ مواصلاتی چینل ہوگا۔

اسرو نے ایکس چندریان -3 مشن پر ایک پوسٹ میں کہا: ’خوش آمدید دوست۔ سی ایچ-2 مدار نے باضابطہ طور پر سی ایچ -3 ایل ایم کا خیرمقدم کیا۔

اسرو نے 2019 میں کہا تھا کہ عین لانچنگ اور مداری تدبیریں کی وجہ سے چندریان-2 کے مداری مشن کی زندگی میں سات سال کا اضافہ ہوا ہے۔ چندریان-2 مشن، جو 22 جولائی 2019 کو شروع کیا گیا تھا، چاند کے نامعلوم جنوبی قطب کو تلاش کرنے کے لیے ایک مدار، لینڈر اور روور پر مشتمل تھا۔


چندریان-2 کو جولائی 2019 میں لانچ کیا گیا تھا اور روور کو لے جانے والا لینڈر ستمبر 2019 میں لینڈنگ سائٹ کے بالکل قریب تکنیکی خرابی کی وجہ سے گر کر تباہ ہوگیا، جس سے مشن 99.99 فیصد کامیاب رہا۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


;