ام ماریہ حق کی نظم، گوشۂ عافیت

اب ہوائیں بھی ہیں زرد زرد خوف سے پروارش پائی جنہوں نے صاف شفاف پربتوں کی ٹھنڈی چھاؤں تلے آج انسانی جنگل میں آکر سسک رہی ہیں

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

ام ماریہ حق

گوشۂ عافیت

اب ہوائیں بھی ہیں

زرد زرد خوف سے

پروارش پائی

جنہوں نے

صاف شفاف پربتوں کی

ٹھنڈی چھاؤں تلے

آج انسانی جنگل میں آکر

سسک رہی ہیں

خود اپنی ہی سانسوں کے لئے

وہ جنگل!

جہاں صرف

انسان ہی نہیں انسان کے تشّدد کا شکار

بلکہ اس نے

اپنے جبرو ظلم کا لہولہان لبادہ

اس قدرت کے بھی

زیب تن کردیا

اب یہ خوف زدہ ہوائیں

صحرا صحرا

تلاش رہی ہیں

گوشۂ عافیت

ام ماریہ حق

Published: 6 Oct 2019, 6:24 PM