جنگ سے مسئلہ کشمیر کا حل نہیں: عمران خان

اسلام آباد: پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ جنگ سے مسئلہ کشمیر کا حل نہیں نکلے گا، صرف بات چیت سے یہ مسئلہ حل ہوگا۔

یو این آئی

میڈیا رپورٹوں کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے پیر کے روز نامہ نگاروں کے ساتھ بات چیت میں سابق ہندوستانی وزیر اعظم اٹل بہاری واجپئی کے ساتھ اس سلسلے میں اپنی گفتگو کا ذکر کیا۔ انہوں نے کہا کہ ’’اٹل بہاری واجپئی نے مجھ سے کہا تھا کہ اگر بی جے پی 2004 میں لوک سبھا انتخابات نہیں ہارتی، تو مسئلہ کشمیر کا حل نکل چکا ہوتا۔‘‘

انہوں نے کہا کہ سابق ہندوستانی وزیر خارجہ نٹور سنگھ واجپئی کے اس بیان کے گواہ تھے۔ اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ مسئلہ کشمیر کا حل موجود ہے اور دونوں ممالک اس کو حل کرنے کے قریب پہنچ چکے تھے۔انہوں نے واضح کیا کہ جنگ سے مسئلہ کشمیر کا حل نہیں نکلے گا اور اس کے حل کا واحد راستہ بات چیت ہے۔

گزشتہ روز ٹی وی چینلوں کے نامہ نگاروں کے ساتھ انٹرویو میں عمران خان نے مزید کہا کہ جب تک بات چیت نہیں ہوگی، تب تک مسئلہ کے حل کی مختلف پہلوؤں پر گفتگو نہيں ہوسکے گی۔

مسئلہ کشمیر کے حل کے آپشن سے متعلق سوال پر عمران خان نے کہا کہ اس مسئلے کے دو یا تین حل موجود ہوسکتے ہیں، جن پر گفتگو ہوتی رہی ہے۔ تاہم، انہوں نے یہ کہتے ہوئے اس سلسلے میں مزید تفصیلات بتانے سے انکار کیا کہ ان آپشن پر بات کرنا قبل از وقت ہوگا۔

ہندوستان سے کسی جنگ کے امکان کو خارج کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ دونوں پڑوسی نیوکلیائی ممالک میں لڑائی نہيں ہوگی، کیونکہ اس کے غیر متوقع اور ناخوشگوار نتائج برآمد ہوں گے۔

Published: 4 Dec 2018, 1:39 PM