پاکستان میں پابندی کے بعد سوشل میڈیاپوری طرح بحال

فیس بک، واٹس ایپ، یوٹیوب، ٹوئٹر، ٹیلی گرام، ٹک ٹاک کی سروسز معطل کی گئی تھیں۔ان سائٹس کو معطل کرنےکے پیچھے تحریک لبیک پاکستان کی جانب سے حکومت کےخلاف دی گئی کال تھی۔

تصویر آئی اے این ایس
تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

پاکستان میں کل جمعہ کےروز جو پانچ گھنٹے کےلئےسوشل میڈیا پر عارضی پابندی لگائی گئی تھی وہ پوری طرح بحال ہوچکی ہے۔ کل وفاقی حکومت کی جانب سے ملک بھر میں سوشل میڈیا پرعارضی پابندی لگا گئی تھی ۔ حکومت کی جانب سے ملک بھر میں جمعہ کو دن گیارہ بجے سے سہ پہر چار بجے تک سوشل میڈیا پر عارضی پابندی لگائی گئی تھی اور اس حوالے سے پاکستان ٹیلی مواصلات اتھارٹی (پی ٹی اے )کو سوشل میڈیا پلیٹ فارمس چند گھنٹوں کے لئے بند کرنے کی ہدایات جاری کی گئی تھی لیکن سہ پہر تین بجےہی یہ خدمات بحال ہونا شروع ہو گئی تھیں۔

فیس بک، واٹس ایپ، یوٹیوب، ٹوئٹر، ٹیلی گرام، ٹک ٹاک کی سروسز معطل کی گئی تھیں۔ان سائٹس کو معطل کرنےکے پیچھے تحریک لبیک پاکستان کی جانب سے حکومت کےخلاف دی گئی کال تھی۔ حکومت کو اندیشہ تھا جمعہ کی نماز کے بعد یہ کلعدم تنطیم پورے ملک میں احتجاج کرےگی جس سے ملک میں بدامنی ہو سکتی ہےاس لئےحکومت نے تمام سوشل میڈیا پلیٹ فارمس کو بند کردیا تھا ۔

واضح رہےپاکستان کے وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ ان لوگوں کا احتجاج کرنےکا منصوبہ پوری طرح ناکام ہوگیا ہےاور وہ سوسشل میڈیا پلیٹ فارمس پر پابندی لگانے کےلئےعوام سے معزرت خوا ہیں۔ شیخ رشید نے کہا کہ حکومت اس تنظیم کے خلاف سخت کارروائی کرےگی۔

پاکستان میں کافی عرصہ سے تحریک لبیک کے احتجاجی مظاہر ہ جاری ہیں۔تنظیم کےلوگ اپنےقائد کی رہائی کےلئےاحتجاج کررہےہیں جبکہ حکومت کاالزام ہے کہ تنظیم دہشت گرد تنظیم ہے۔تنظیم کامنصوبہ تھاکہ کل جمعہ کی نماز کے بعد پورے ملک میں احتجاج کیا جائے لیکن حکومت کی سختی کی وجہ سےاورعوام میں کورونا کی دہشت کی وجہ سے لوگ احتجاج کےلئےنہیں آئے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔