پاکستان ہوا شرمسار! لائیو شو میں عمران خان کی پارٹی کی خاتون لیڈر نے رکن پارلیمنٹ کو مارا تھپڑ

پی ٹی آئی لیڈر فردوس عاشق کا کہنا ہے کہ پی پی پی رکن پارلیمنٹ قادر نے ان کے اور ان کے والد کے خلاف گالی دی اور دھمکی دی جس پر انھوں نے اپنے دفاع میں رکن پارلیمنٹ کو تھپڑ مارا۔

ویڈیو گریب
ویڈیو گریب
user

تنویر

پاکستانی لیڈران اکثر اپنے بچکانا اور مضحکہ خیز بیانات کی وجہ سے عالمی سطح پر مذاق کا موضوع بنتے رہے ہیں۔ ایسا ہی ایک معاملہ لائیو ٹی وی شو کے دوران سامنے آیا جب عمران خان کی پارٹی پی ٹی آئی کی خاتون لیڈر فردوس عاشق اعوان نے پی پی پی رکن پارلیمنٹ قادر مندوخیل کو زوردار تھپڑ رسید کر دیا۔ اس واقعہ کا ویڈیو سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہو رہا ہے اور فردوس کے ساتھ ساتھ پاکستانی لیڈروں کا بھی لوگ خوب مذاق بنا رہے ہیں۔

’ڈان نیوز‘ کے مطابق یہ واقعہ اس وقت سرزد ہوا جب ایک ٹی وی چینل پر عمران خان کی پارٹی لیڈر فردوس عاشق اور اپوزیشن پی پی پی رکن پارلیمنٹ قادر مندوخیل آپس میں کسی ایشو پر تلخ مباحثہ کر رہے تھے۔ دیکھتے ہی دیکھتے یہ بحث بڑھ گئی او دونوں ایک دوسرے کو بھلا برا کہنے لگے۔ بار بار دونوں لیڈران ایک دوسرے کو ’بدعنوان‘ اور ’شرم کرو‘ جیسے الفاظ کہہ رہی تھے، اور پھر فردوس عاشق نے قادر کو تھپڑ مار دیا۔ کسی طرح وہاں موجود لوگوں نے دونوں کو الگ کیا اور خاموش کرایا۔

یہاں قابل ذکر ہے کہ فردوس عاشق اعوان عمران خان کی اسپیشل اسسٹنٹ رہ چکی ہیں اور فی الحال وہ پاکستان واقع پنجاب خطہ کے وزیر اعلیٰ کی اسپیشل اسسٹنٹ ہیں۔ قادر کو تھپڑ مارے جانے کا ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد فردوس عاشق کا بیان بھی سامنے آیا ہے اور انھوں نے اپنی صفائی میں کہا ہے کہ رکن پارلیمنٹ قادر نے ان کے اور ان کے والد کے خلاف گالی دی اور دھمکی دی جس پر انھوں نے اپنے دفاع میں رکن پارلیمنٹ کو تھپڑ مارا۔