’شیرِ پاکستان‘ کا کورونا وائرس کے سبب نیو یارک میں انتقال

حاجی محمد افضل 7اپریل 1935 کو پیدا ہوئے تھے اور 1960 میں صدر پاکستان ایوب خان نے انہیں شیر پاکستان کے لقب سے نوازا تھا۔

سوشل میڈیا
سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

پاکستان کے سابق اولمپئن پہلوان محمد افضل کورونا کے مرض میں مبتلا ہونے کے بعد نیویارک میں انتقال کر گئے ۔ 24 نیوز ٹی وی چینل نے بدھ کواپنی رپورٹ میں کہا کہ انھیں امریکہ میں ہی سپرد خاک کیا جائے گا۔

ایک ماہ قبل ہی انہیں امریکہ منتقل کیا گیا تھا۔ ان کی عمر 85 سال تھی اور وہ ایک ماہ سے امریکہ میں مقیم تھے۔ان کے پسماندگان میں چار بیٹے ہیں جن میں سے تین امریکا اور ایک پاکستان میں رہائش پذیر ہے۔ محمد افضل پہلوان نے 1964 کے ٹوکیو اولمپکس میں پاکستان کی نمائندگی کی تھی۔


پاکستان کے سابق صدر فیلڈ مارشل ایوب خان نے انھیں شیرِ پاکستان کا لقب دیا تھا۔ حاجی محمد افضل 7اپریل 1935 کو پیدا ہوئے تھے اور 1960 میں صدر پاکستان ایوب خان نے انہیں شیر پاکستان کے لقب سے نوازا تھا۔انہوں نے 1964 کے ٹوکیو اولمپکس میں شرکت کی تھی لیکن سیمی فائنل میں انجری کے سبب ایونٹ سے باہر ہو گئے تھے۔

اولمپیئن محمد افضل نے کئی نامور پہلوانوں کو گر سکھائے اور ان کے معروف شاگردوں میں بشیر بھولابھالا، طیب رضا اعوان ٹائیگر پہلوان، عثمان مجید بلو پہلوان مرحوم شامل ہیں۔حاجی محمد افضل نے بلال اعوان پہلوان، حافظ اسرار پہلوان اور یاسر عباس پہلوان کو بھی پہلوانی کے گر سکھائے۔


واضح رہے کہ محمد افضل کورونا وائرس کا شکار ہو کر انتقال کرنے والے پاکستان کے تیسرے کھلاڑی ہیں۔ گزشتہ ماہ اسکواش کے عظیم کھلاڑی اعظم خان کورونا وائرس کے سبب لندن میں انتقال کر گئے تھے۔رواں ماہ سابق فرسٹ کلاس کرکٹر اور پاکستانی ٹیم کے سابق کرکٹرز اختر سرفراز کے بھائی ظفر سرفراز کورونا وائرس کے سبب جاں بحق ہو گئے تھے۔

یاد رہے کہ دنیا بھر میں کورونا وائرس سے ہلاکتوں کا سلسلہ جاری ہے اور اب تک وائرس کی زد میں آ کر ایک لاکھ 75ہزار 621 افراد ہلاک اور 25 لاکھ سے زائد متاثر ہو چکے ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔