پاکستان: شمالی وزیرستان میں دہشت گردانہ حملہ، فوج کے 2 افسران سمیت 7 جوانوں کی موت

پاکستانی فوج کی میڈیا وِنگ کا کہنا ہے کہ علاقہ میں موجود دہشت گردوں سے نمٹنے کے لیے آپریشن جاری ہے۔

<div class="paragraphs"><p>پاکستانی پولیس، تصویر سوشل میڈیا</p></div>

پاکستانی پولیس، تصویر سوشل میڈیا

user

قومی آوازبیورو

پاکستان کو ایک بار پھر دہشت گردانہ حملے کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ آج پیش آئے اس دہشت گردانہ حملے میں پاکستانی فوج کے 2 افسر سمیت 7 جوانوں کی ہلاکت کی خبریں سامنے آ رہی ہیں۔ کچھ خبروں میں مجموعی طور پر 9 جوانوں کی موت کی اطلاع دی جا رہی ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ یہ حملہ 6 دہشت گردوں نے کیا تھا اور جوابی کارروائی میں پاکستانی فوج نے سبھی 6 دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا۔

یہ دشہت گردانہ حملہ افغانستان کی سرحد سے ملحق شمالی وزیرستان میں ہوا ہے۔ پاکستانی فوج کے ذریعہ جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ 6 دہشت گرد دراندازی کی کوشش کر رہے تھے جن کی کوششوں کو ناکام کر دیا گیا ہے۔ اس کے بعد دہشت گردوں نے دھماکہ خیز مادوں سے بھری گاڑی کو چوکی میں گھسا دیا، جس کے بعد کئی بم دھماکے ہوئے۔ جوابی کارروائی میں فوج نے سبھی دہشت گردوں کو مار گرایا۔ دونوں طرف سے ہوئی شدید گولی باری کے دوران پاکستانی فوج کے لیفٹیننٹ کرنل سید کاشف علی اور کیپٹن محمد احمد بدر شہید ہو گئے۔


پاکستانی فوج کی میڈیا وِنگ کا کہنا ہے کہ علاقہ میں موجود دیگر دہشت گردوں کا صفایہ کرنے کے لیے آپریشن چلایا جا رہا ہے۔ خیبر پختونخواں کے وزیر اعلیٰ علی امین گنڈاپور نے اس دہشت گردانہ حملے کی شدید مذمت کی ہے۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


/* */