پاکستان: اپوزیشن کے اتحاد سے عمران خان بوکھلا اٹھے

بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ عمران خان کو گزشتہ تاناشاہوں کو یاد رکھنا چاہئے۔ انہیں اپنی زندگی اور قسمت کو یاد رکھنا چاہئے۔آپ کی قسمت ان سے الگ نہیں ہوگی۔

تصویر سوشل میڈیا بشکریہ عرب نیوز
تصویر سوشل میڈیا بشکریہ عرب نیوز
user

سید خرم رضا

پاکستان کے وزیراعظم عمران خان کی مشکلیں بڑھتی جارہی ہیں۔پاکستان میں اپوزیشن کی ۱۱جماعتوں کےاتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومینٹ(پی ڈی ایم ) نے عمران خان کی نیند اڑادی ہے۔ پی ڈی ایم کے گوجرانوالا اور کراچی میں ہونے والے عوامی جلسوں میں جس بڑی تعداد میں عوام نےشرکت کی اس سے وزیر اعظم عمران خان پوری طرح بوکھلا گئے ہیں۔ پر عالمی وبا کورونا وائرس کے خطرے کے درمیان کراچی میں عمران خان کے استعفی کی مانگ پر سڑکوں پر اپوزیشن جماعتوں کے حامیوں کا جو جم غفیرامڑا اس کے بعد عمران خان حکومت نےاپنی بوکھلاہٹ میں نواز شریف کے داماد صفدر کو گرفتار کرلیا ۔

پاکستانی وزیراعظم عمران خان پر دراصل ملک کی فوج کے ساتھ 2018کے انتخابات میں دھاندلی کرنے اور غیرجمہوری طریقہ سے اقتدار حاصل کرنے کا الزام ہے جس پر اپوزیشن پارٹیاں متحد ہوکر مظاہرہ کررہی ہیں۔ مسٹر خان نے حالانکہ اقتدار میں آنے کے لئے پاکستانی فوج سے مدد کے الزامات کی تردید کی ہے۔ واضح رہے مسلم لیگ (ن) کےقائد نواز شریف نے لندن سےپاکستانی فوجی سربراہ جنرل قمر باجوا پرالزام لگایاتھا کہ وہ عمران خان کی مددکررہےہیں جس کے جواب میں پاکستانی وزیر اعظم عمران خان کھل کر جنرل باجوا کی حمایت میں اتر آئےتھے۔


واضح رہے عمران خان نےنواز شریف کے بیان کے بعد ایک جلسہ سےخطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ سابق وزیراعظم نواز شریف کو بدعنوانی کے معاملہ میں واپس پاکستان لانے کے لئے ہر ممکن کوشش کریں گےاور اس مرتبہ ان کو وی آئی پی جیل نہیں بلکہ عام جیل میں رکھیں گے۔ عمران خان کی اس دھمکی کے باوجود پی ڈی ایم پارٹی نے کراچی کے باغ جناح میں زوردار ریلی کرکے عمران خان حکومت کو اپنے ارادے واضح کردیئے۔

پاکستان میں 18اکتوبر 2007کو ملک کی سابق وزیراعظم بے نظیر بھٹو پر گھر واپسی کے دوران حملہ کردیا گیا تھا ا س حملے میں 200سے زیادہ لوگو ں کی موت اور 500 سے زیادہ لوگ زخمی ہوگئے تھے۔ اتفاق سے پی ڈی ایم کی یہ ریلی بھی 18اکتوبر کو منعقد ہوئی۔


اس موقع پر پاکستان پپلز پارٹی (پی پی پی) کے صدر بلاول بھٹو زرداری نے ریلی میں پاکستانی وزیراعظم پر حملہ کرتے ہوئے کہاکہ عمران خان کو گزشتہ تاناشاہوں کو یاد رکھنا چاہئے۔ انہیں اپنی زندگی اور قسمت کو یاد رکھنا چاہئے۔آپ کی قسمت ان سے الگ نہیں ہوگی۔ آپ لوگوں کی آواز کبھی دبا نہیں سکتے۔ لوگوں کا غصہ حکومت اور اس کی بنیاد کو مٹا دے گا۔

پاکستان مسلم لیگ نواز (پی ایم ایل۔این) کی نائب صدر مریم نواز نے بھی اس دوران پاکستانی وزیراعظم کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے عمران خان حکومت کی غلطیوں، بدعنوانی اور نااہلی کو دہرایا۔عمران خان نے جہاں مریم اور بلاول کی مزاق اڑاتے ہوئے کہا تھاکہ ان میں سےچاہے ایک نانی بن گئی ہو لیکن دونوں بچےہیں اور دونوں نے کبھی حلال کا کوئی کام نہیں کیا ۔عمران کےاس بیان کا جواب دیتےہوئے مریم نےکہا کہ عمران نے خواتین کی تذلیل کی ہے اور پاکستانی خواتین ان کومعاف نہیں کریں گی۔ واضح رہےپی ڈی ایم نے پورے ملک میں چھہ جلسوں کے انعقاد کا منصوبہ بنایا ہوا ہے اور یہ تمام اجلاس عمران حکومت کےلئے مسائل کھڑے کریں گے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔