نواز شریف کی بیٹی کا سنگین الزام ’جیل میں میرے کمرے اور باتھ روم میں کیمرے لگے تھے‘

پاکستان کے سابق وزیر اعظم نواز شریف کی بیٹی اور ان کی پارٹی پاکستان مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز نے عمران خان کی حکومت پر سنگین الزامات عائد کئے ہیں

نواز شریف کی بیٹی مریم نواز / تصویر بشکریہ ڈی ڈبلیو
نواز شریف کی بیٹی مریم نواز / تصویر بشکریہ ڈی ڈبلیو
user

قومی آوازبیورو

اسلام آباد: پاکستان کے سابق وزیر اعظم نواز شریف کی بیٹی اور ان کی پارٹی پاکستان مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز نے عمران خان کی حکومت پر سنگین الزامات عائد کئے ہیں۔ مریم نے کہا کہ جب وہ جیل میں قید تھیں تو ان کے کمرے اور باتھ روم میں کیمرے لگوائے گئے تھے۔

حال ہی میں دئے گئے ایک انٹرویو میں مریم نواز نے جیل میں مبینہ سہولیات کی عدم دستیابی کا ذکر کیا، جن کا انہوں نے جیل میں سامنا کیا۔ خیال رہے کہ مریم نواز گزشتہ چوہدری شوگر ملز معاملہ میں گرفتار کئے جانے کے بعد جیل میں قید رکھی گئی تھیں۔ انٹرویو کے دوران مریم نوان نے برسر اقتدار عمران خان حکومت کو جم کر نشانہ بنایا۔


پاکستانی میڈیا کے مطابق مریم نواز نے کہا کہ ’’میں دو بار جیل جا چکی ہوں اور جیل میں اپنے ساتھ یعنی ایک خاتون کے ساتھ ہونے والا سلوک بتا دیا تو ان کو منہ چھپانے کی جگہ نہیں ملے گی۔‘‘ انہوں نے کہا کہ ’’آج یہ نہیں بتاؤں گی، آج جب میں جدوجہد کر رہی ہوں تو بالکل اس چیز کے پیچھے چھپنا نہیں چاہتی، اپنے آپ کو متاثرہ ظاہر کرنا نہیں چاہتی، آج یہ رونا نہیں رونا چاہتی کہ میرے ساتھ زیادتی ہو گئی۔‘‘

مریم نواز نے کہا کہ ’’اگر مریم نواز کا دورازہ توڑ کر کمرے میں گھس سکتے ہیں، اس کے والد کے سامنے حق بات کرنے پر گرفتار کرسکتے ہیں، اگر اس کے کمرے اور باتھ روم میں کیمرے لگا سکتے ہیں اور ذاتی حملے کرا سکتے ہیں تو پاکستان کی کوئی عورت محفوظ نہیں ہے۔‘‘ انہوں نے کہا کہ عورت چاہے پاکستان میں ہو یا دنیا میں ہو وہ کمزور نہیں ہو سکتی۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔