پاکستان زلزلہ: ہلاکتوں کی تعداد 40 ہوئی، اقوام متحدہ کی طرف سے امداد کی پیش کش

متحدہ عرب امارات (یواے ای) اور جاپان کے ساتھ ساتھ اقوام متحدہ نے پاکستان کے زلزلہ سے متاثر لوگوں کی باز آبادکاری کے لیے مالی مدد دینے کی پیش کش کی ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

اسلام آباد: متحدہ عرب امارات (یواے ای) اور جاپان کے ساتھ ساتھ اقوام متحدہ نے پاکستان کے زلزلہ سے متاثرہ لوگوں کی باز آبادکاری کے لیے مالی مدد دینے کی پیش کش کی ہے۔ پاکستان کی قومی آفات بندوبست اتھارٹی (این ڈی ایم اے )کے ایک اہلکار نے جمعہ کو یہ اطلاع دی ۔انھوں نے کہاکہ آفات سے نمٹنے کے لیے ملک کے پاس سبھی ضروری وسائل موجود ہیں۔

واضح رہے کہ پاکستان کے شمالی علاقہ اور پاکستان مقبوضہ کشمیر میں بدھ کو 5اعشاریہ 8کی شدت کے زلزلہ کی وجہ سے 40 افراد ہلاک ہو چکے ہیں اور 450 مکانات کو نقصان پہنچاہے۔ جمعرات کو دوبارہ زلزلہ کے جھٹکے محسوس کیے گئے جس میں 75 افراد زخمی ہوگئے۔زلزلہ کی وجہ سے 10 ہزار سے زیادہ لوگ متاثر ہوئے ہیں۔

پاکستان میں یواے ای کے سفیر حماد الزابی نے بدھ دیر رات اپنے ملک کی طرف سے امداد کی پیش کش کرتے ہوئے ٹوئیٹر پر لکھا،’’ مجھے ابو ظہبی سے براہ راست ہدایت ملی ہے کہ پاکستان کے مختلف حصوں میں زلزلہ سے متاثرہ خاندانوں اور علاقوں کو ہرطرح کی امداد فراہم کریں ۔‘‘

این ڈی ایم اے کے ڈپٹی ڈائریکٹر (میڈیا )ممتاز نے کہا،’’ پاکستان میں اقوام متحدہ کے نمائندہ نے متاثرہ علاقوں میں خواتین اور بچوں کی بازآبادکاری کےلیے مکمل تعاون کی پیش کش کی ہے ۔‘‘ انھوں نے کہاکہ جاپان نے زلزلہ سے متاثرہ لوگوں کی مددکےلیے ہم سے رابطہ کیاہے ۔انھوں نے کہاکہ پاکستان کو اس وقت کسی طرح کی غیر ملکی امداد کی ضرورت نہیں ہے کیونکہ اس کے پاس سبھی ضروری وسائل موجود ہیں۔

پاکستان میں اس سے قبل اکتوبر 2015 میں 7 اعشاریہ 5کی شدت کے زلزلہ میں تقریبا 400افراد ہلاک ہوئے تھے ۔ اکتوبر 2005میں 7اعشاریہ 6کی شدت کے زلزلہ میں مختلف علاقوں خاص طور سے کشمیر میں 73ہزار افراد ہلاک ہوئے تھے اور تقریبا 35لاکھ بے گھر ہوگئے تھے۔