امریکہ میں کورونا متاثرین کی تعداد جتنی بتائی جا رہی ہے اس سے 10 گنا زیادہ!

امریکی مرکز برائے وبائی بیماری کنٹرول اور روک تھام کے ڈائرکٹر ریڈ فیلڈ کا کہنا ہے کہ ایک اندازے کے مطابق کووڈ-19 کے جتنے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں، ان کے ساتھ 10 دیگر افراد بھی وبا کا شکار ہوئے ہیں۔

سوشل میڈیا
سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

دنیا میں کورونا وبا سے اگر کوئی ملک سب سے زیادہ تباہ ہوا ہے تو وہ امریکہ ہے۔ پیش کردہ تازہ اعداد و شمار کے مطابق امریکہ میں اب تک کورونا انفیکشن کی زد میں تقریباً 25 لاکھ لوگ آ چکے ہیں اور تقریباً 1.26 لاکھ اموات بھی ہو چکی ہیں۔ لیکن اس سلسلے میں ایک حیران کرنے والی بات سامنے آ رہی ہے اور وہ یہ کہ امریکہ میں اس عالمی وبا کے اب تک جتنے معاملے سامنے آئے ہیں اس سے 10گنا زیادہ لوگ اس انفیکشن کی زد میں ہیں ۔

دراصل یہ بات امریکی مرکز برائے وبائی بیماری کنٹرول اور روک تھام (سی ڈی سی) کے ڈائرکٹر رابرٹ ریڈ فیلڈ نے کہی ہے۔ انہوں نے جمعرات کے روز اس سلسلے میں کہا کہ "ہمارا اندازہ ہے کہ ملک میں کووڈ-19 کے جتنے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں ، ان کے ساتھ 10 دیگر افراد بھی وبا کا شکار ہوئے ہیں۔" قابل ذکر ہے کہ سی ڈی سی نے جمعرات کو اس سلسلے میں باضابطہ ایک رپورٹ بھی جاری کیا ہے۔

جاری رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ملک میں اب تک تقریبا 23.70 لاکھ افراد اس مہلک وائرس سے متاثر ہوچکے ہیں اور اسی بنیاد پر امریکہ میں کورونا سے متاثرہ افراد کی اصل تعداد 10 گنا یعنی 2.4 کروڑ ہوجائے گی۔ یہ تعداد ملک کی کل آبادی کا تقریباً 8 فیصد ہے۔

یہاں قابل ذکر ہے کہ امریکہ میں کورونا انفیکشن متاثرین کی تعداد لگاتار بڑھتی ہی جا رہی ہے حالانکہ اموات کی شرح میں کچھ کمی ضرور درج کی گئی ہے۔ گزشتہ بدھ کی ہی بات ہے جب امریکہ میں انفیکشن کے 36000 سے زیادہ نئے معاملے رپورٹ ہوئے۔ امریکہ میں یہ ایک دن میں رپورٹ کورونا انفیکشن کے سب سے زیادہ معاملے ہیں۔ اس سے ظاہر ہے کہ متاثرین کی تعداد امریکہ میں اب بھی بہت تیزی کے ساتھ بڑھ رہی ہے۔

(یو این آئی ان پٹ کے ساتھ)