شمالی کوریا نے بحیرہ جاپان میں دو میزائل داغے

جنوبی کوریا کے جوائنٹ چیف آف اسٹاف نے بتایا کہ وہ صورت حال پر نظر رکھے ہوئے ہیں اور اگر شمالی کوریا اور میزائل فائر کرے تو آگے کی کارروائی کی جائے گی ۔

سوشل میڈیا
سوشل میڈیا
user

یو این آئی

جب پوری دنیا کورونا کے قہر سے پریشان ہے اور دنیا کے کئی شہر دیگر آبادی سے اس وبا کی وجہ سے کٹ کر رہ گئے ہیں اس وقت شمالی کوریا میزائل داغ کر اپنی غیر ذمہ داری کا مظاہرہ کر رہاہے۔شمالی کوریا نے ہفتہ کو شمالی صوبہ پیونگان سے کم فاصلے کے دو بیلسٹک میزائل بحیرہ جاپان میں داغے ۔

جنوبی کوریا کی فوج نے بتایا کہ شمالی کوریا نے شمالی صوبہ پيونگان سے بحیرہ جاپان میں کم فاصلے کے دو بیلسٹک میزائل داغے ہیں ۔ جنوبی کوریا کے جوائنٹ چیف آف اسٹاف نے بتایا کہ وہ صورت حال پر نظر رکھے ہوئے ہیں اور اگر شمالی کوریا اور میزائل فائر کرے تو آگے کی کارروائی کی جائے گی ۔

شمالی کوریا نے اس ماہ کے اواخر میں بھی کئی میزائل داغے تھے ۔ امریکہ اور چین نے پیانگ یانگ کو اپنے نیو کلیائی اور میزائل پروگراموں کو ختم کرنے پر مذاکرات بحال کرنے کو کہا ہے ۔ جاپان کوسٹ گارڈ نے تصدیق کی ہے کہ ایک میزائل اس کے خصوصی اقتصادی خطے کے سمندری حدود کے باہر فائر کیا گیا تھا ۔ شمالی کوریا نے اعلان کیا ہے کہ وہ 10 اپریل کو ملک کی پارلیمنٹ سپریم پیپلز اسمبلی کا ایک اجلاس منعقد کرے گا ۔ تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ اجلاس میں ملک کے تقریبا 700 رہنما شامل ہوں گے ۔