امریکی اعلان کے بعد چین نے غیر ملکی پروازوں پر پابندی میں ڈھیل دی

چینی سول ایوی ایشن ریگولیٹر نے بتایا کہ غیرملکی جہازوں کوایک ہفتہ میں یہاں آنے کی اجازت دی جائے گی اور ائرلائنس اپنی پسند کے شہروں کا انتخاب کر سکتی ہیں۔

سوشل میڈیا
سوشل میڈیا
user

یو این آئی

بیجنگ، 04 جون (اسپوٹنک) امریکہ کے چینی فلائٹ سروس پر پابندی عائد کئے جانے کے کچھ گھنٹوں بعد ہی چین نے کووڈ۔19 وبا کے پیش نظر غیرملکی پروازوں پر لگائی گئی پابندیوں میں جمعرات کو ڈھیل دینے کا اعلان کیا۔

امریکہ کے محکمہ ٹرانسپورٹ نے بدھ کو امریکہ میں چین سے آنے والے مسافر پروازوں پر پابندی عائد کرنے کی تجویز پیش کی تھی۔ فی الحال اس وقت صرف چار چینی ائر لائنس دونوں ممالک کے درمیان معمول کی پروازیں چلارہی ہے اورامریکی ائرلائنس کی کوئی بھی پرواز چین نہیں جارہی ہے۔ 16 جون سے دونوں ممالک کے درمیان پروازیں بند ہوجائیں گی۔

چین کے سول ایوی ایشن ریگولیٹر نے جمعرات کو بتایا کہ غیرملکی جہازوں کوایک ہفتہ میں یہاں آنے کی اجازت دی جائے گی اور وہ ائرلائنس اپنی پسند کے شہروں کا انتخاب کر سکتی ہیں۔ اس فہرست میں بیجنگ، شنگھائی، شیزیازو آنگ اور ووہان سمیت 32 شہروں کو شامل کیا گیا ہے۔

ریگولیٹر نے کہا ہے کہ فہرست میں وبائی صورت حال کے پیش نظر تبدیلی بھی ہوسکتی ہے۔واضح رہے کورونا وائرس کے پھیلنے کے بعدجہاں کئی ممالک نے چینی پروازوں پر پابندی لگا دی تھی وہیں چین نے بھی اپنے ملک میں بیرون ممالک کی پروازوں پر پابندی لگا دی تھی۔ویسے تو پوری دنیا میں انٹرنیشنل پروازیں نہ کے برابر ہی چل رہی ہیں لیکن چین اور امریکہ کے تعلقات کافی خراب ہیں اس لئے چین اور امریکہ کے فیصلوں پر سب کی نظریں لگی رہتی ہیں۔

next