دنیا کی نہیں اپنی مرضی کی حکومت بنائیں گے۔ وزیر خارجہ امیر متقی

افغان وزیر خارجہ نے افغانستان پر غیرملکی دباؤ کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ جہاں بھی نیا نظام آتا ہے وہاں اپنے اعتماد کے لوگ آتے ہیں، افغانستان میں یہ کوئی نئی بات نہیں ہے۔

علامتی تصویر آئی اے این ایس
علامتی تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

افغانستان کے وزیر خارجہ امیر متقی نے کہا ہے کہ دنیا ہمارے سامنے شرائط نہ رکھے ہم اپنی مرضی کی حکومت بنائیں گے، چین، پاکستان، قطر اور ترکی نے ہمارا ساتھ دیا ہے اور تعاون کرنے پر ان ممالک کے ہم شکر گزار ہیں۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق افغان وزیر خارجہ امیر خان متقی نے نیوز کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ان کی کابینہ میں ہر قوم سے تعلق رکھنے والے افراد شامل ہیں، آنے والے دنوں میں اس میں مزید مثبت تبدیلی آئے گی، ہم تمام افغان عوام کی نمائندگی کرتے ہیں ِ۔افغان وزیر خارجہ نے کہا کہ افغانستان پر غیرملکی دباؤ کو مسترد کرتے ہیں، جہاں بھی نیا نظام آتا ہے وہاں اپنے اعتماد کے لوگ آتے ہیں، افغانستان میں یہ کوئی نئی بات نہیں ہے۔


امیر خان متقی نے کہا کہ حکومت پچھلے منصوبوں کو مکمل کرنا چاہتے ہیں، ملک میں روزگار کے مواقع فراہم کرنا چاہتے ہیں، تاجروں سے گزارش ہے کہ کاروبار کریں تاکہ اپنے لوگوں کو فائدہ پہنچے۔انہوں نے کہا کہ عالمی امداد کا خیرمقدم کرتے ہیں، اسے مستحق افراد تک پہنچانا چاہتے ہیں، کوشش ہے باہر جانے والے مہاجرین واپس آئیں، دنیا سے اپیل ہے جو ہم سے تعاون کررہے ہیں اسے سیاست سے نہ جوڑا جائے، دنیا کے ساتھ مثبت تعلقات چاہتے ہیں۔افغان وزیر خارجہ نے کہا کہ دنیا سے اپیل ہے کہ افغانستان کے لیے مزید انتشار والی پالیسی نہ اپنائیں اور مثبت رائے اختیار کریں، افغانستان کو ترقی کرنے دیں۔

امیر متقی نے کہا کہ افغانستان ایک بہت بڑی مشکل سے گزرا ہے، چاہتے ہیں دنیا اسلامی ممالک ہماری ترقی کے شعبوں کی مدد کرے، عالمی برادری سے افغان عوام کی مدد کا مطالبہ کرتے ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔