لندن: دہشت گردانہ حملہ میں 2 افراد کی ہلاکت کی تصدیق، حملہ آور بھی ہلاک

میئر صادق خان نے بھی حملے میں زخمی ہونے والے 2 لوگوں کے مارے جانے کی تصدیق کر دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ’’لندن میں دہشت گردی کبھی نہیں پیدا ہوگی، دہشت گردی کبھی نہیں جیت پائے گی‘‘۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا

یو این آئی

لندن: میٹروپولٹین پولس کے کمشنر كریساڈک نے جمعہ کو لندن برج حملے میں دو لوگوں کے مارے جانے کی تصدیق کی۔ اس حملہ میں دو افراد کی موت کے علاوہ دیگر تین افراد زخمی ہوئے ہیں جن کااسپتال میں علاج چل رہا ہے۔ مسٹر کریساڈک نے پریس کانفرنس میں کہا’’ہمارے انسداد دہشت گردی کےجوان اس حملہ میں اپنی جان گنوانے والے لوگوں کی شناخت کر کے مقتولین کے لواحقین کی مدد کرے گا‘‘۔

كریساڈک نے بتایا کہ حملے کے بعد لندن میں احتیاطا ًسیکورٹی بڑھا دی گئی اور تلاشی مہم جاری ہے۔ مسٹر کریساڈک نے کہا ’’آنے والے دنوں میں اور بھی پولس فورس دیکھنے کو ملیں گے اور ہر علاقے میں سیکورٹی فورس تعینات ہوں گے‘‘۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ ’’ہم اس بات کی تحقیقات کر رہے ہیں اور یہ جاننے کی کوشش کر رہے ہیں کہ صحیح معنوں میں یہاں کیا ہوا تھا اور اس میں کسی دوسرے کے شامل ہونے کی گنجائش ہے یا نہیں۔ اسی وجہ ہم نے حملے کے بعد لندن برج کے میدان میں تلاشی مہم جاری رکھی‘‘۔

لندن کے میئر صادق خان نے بھی حملے میں زخمی ہونے والے دو لوگوں کے مارے جانے کی تصدیق کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ’’لندن میں دہشت گردی کبھی نہیں پیدا ہوگی، دہشت گردی کبھی نہیں جیت پائے گی‘‘۔ صادق خان نے جمعہ کو لندن برج کے حملہ آور کو غیر مسلح کرنے والے شہریوں کا شکریہ ادا کیا۔ انھوں نے پریس کانفرنس میں کہا کہ ’’آج اس حملہ کے منظر میں لندن کے شہریوں نے بہادری کا ثبوت دیا۔ انہوں نے بغیر ڈرے حملہ آور کو غیر مسلح کیا۔ میں لندن کے لوگوں کی جانب سے ان تمام بہادروں کا شکریہ ادا کرتا ہوں‘‘۔

اس دوران برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن نے کہا کہ معاملہ کی جانچ جاری ہے اور جلد ہی لوگوں کو انصاف ملے گا۔ انہوں نے کہا کہ میٹروپولٹين پولیس کی تحقیقات جاری ہے۔ پولس نے اس سے پہلے بتایا کہ انہوں نے اس معاملے میں ایک مشتبہ کو مار گرایا ہے۔