ایران میں بحریہ کے 19 جوان ہلاک، 15 زخمی

ایران کی بحریہ ٹریننگ ایکسرسائز میں لگی ہوئی ہےاور اسی ٹریننگ کے تحت ایران نے ایک میزائل ٹیسٹ کیا لیکن غلطی سے اس میزائل سے اپنے ہی جہاز کو نشانہ بنا دیا۔

سوشل میڈیا
سوشل میڈیا
user

یو این آئی

ایران میں ایک جنگی جہاز پر فوجی مشق کے دوران ہوئے حادثے میں ایرانی بحریہ کے 19 جوانوں کی موت ہوگئی جبکہ پندرہ دیگر زخمی ہوگئے۔ایرانی بحریہ نے پیر کو بیان جاری کرکے یہ اطلاع دی۔

حادثہ اس وقت ہوا جب جنوبی ایران مین ’کورناک‘ نام کے ایک جنگی جہاز پر فوجی مشق ہورہی تھی۔ایران کی آئی آر این اے خبر رساں ایجنسی کے مطابق زخمیوں کی حالت سنگین نہیں ہے اور ان کا علاج کیاجارہا ہے۔ حادثے کی وجوہات کا ابھی پتہ نہیں چل سکا ہے۔

واضح رہے ایران کی بحریہ ٹریننگ ایکسرسائز میں لگی ہوئی ہےاور اسی ٹریننگ کے تحت ایران نے ایک میزائل ٹیسٹ کیا لیکن غلطی سے اس میزائل سے اپنے ہی جہاز کو نشانہ بنا دیا۔ حادثہ ٹریننگ کے دوران ہوا ہے جس میں کئی فوجی زخمی بھی ہوئے ہیں۔ کونارک ایرانی بحریہ کا بڑا جہاز ہے جو میزائل ٹیسٹنگ کے دوران تباہ ہو گیا۔

بتایا جاتا ہے کہ حادثہ اتوار کے روز جاسک بندرگاہ پر سرزد ہوا جو کہ تہران سے تقریباً 1270 کلو میٹر کی دوری پر ہے۔ میزائل نے ہیندیزان کلاس کی جہاز کونارک کو نشانہ بنایا۔ سرکاری چینل پر اس واقعہ کو ایک حادثہ قرار دیا گیا اور بتایا گیا کہ جہاز کو اس بات کی جانکاری دی گئی تھی کہ وہ ہدف کے کافی قریب ہے۔ میڈیا نے بتایا کہ خبر رساں ایجنسی فارس کے مطابق اس جہاز پر سوار تقریباً 40 فوجی اور باقی لوگ لاپتہ ہیں۔ فارس کے مطابق واقعہ میں درجنوں کی موت ہوئی ہے۔

مقامی میڈیا میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ کونارک پر غلطی سے سی-802 نور میزائل سے حملہ کر دیا گیا تھا۔ حالانکہ یہ غلطی کیسے ہوئی، اس کے بارے میں کوئی کچھ نہیں بتا پا رہا ہے۔ سوشل میڈیا پر واقعہ سے جڑی کئی غیر مصدقہ ویڈیو وائرل ہو رہی ہیں۔ ویڈیو میں زخمی فوجی اور بچاؤ اہلکاروں کو دکھایا گیا ہے۔ ایران ریوولیوشن گارڈس کارپس (آئی آر جی سی) اور بحریہ مشترکہ طور سے میزائل کا ٹیسٹ کر رہے تھے۔ کونارک کو بھی اس ٹیسٹنگ کی جانکاری تھی اور اسے طے وقت میں راستے سے ہٹنا تھا لیکن وقت سے پہلے ہی ٹیسٹ کیا گیا اور نشانہ بن گیا۔