سعودی عرب کے لیے چار جنگی بحری جہاز اطالوی کمپنی بنائے گی

خلیج کی عرب بادشاہت سعودی عرب کی بحریہ کے لیے چار جنگی بحری جہاز ریاستی ملکیت میں کام کرنے والی ایک اطالوی کمپنی تیار کرے گی۔

سعودی عرب کے لیے چار جنگی بحری جہاز اطالوی کمپنی بنائے گی
سعودی عرب کے لیے چار جنگی بحری جہاز اطالوی کمپنی بنائے گی
user

ڈی. ڈبلیو

اٹلی میں میلان سے ملنے والی رپورٹوں میں نیو ایجنسی روئٹرز نے لکھا ہے کہ یہ بات اٹلی میں ریاستی ملکیت میں کام کرنے اور بحری جہاز تیار کرنے والے ادارے فِنکانتیئری (Fincantieri) کے جاری کردہ ایک بیان میں بتائی گئی ہے۔

اس کمپنی نے بتایا کہ اسے سعودی عرب کے لیے چار جنگی بحری جہاز تیار کرنے کا تقریباﹰ 1.3 بلین ڈالر مالیت کا کنٹریکٹ امریکی بحریہ نے دیا ہے۔

فِنکانتیئری کے بیان کے مطابق، ''یہ معاہدہ کئی بلین ڈالر مالیت کے اس معاہدے کا حصہ ہے، جو اس کنسورشیم کو ملا ہے، جس کی سربراہی دفاعی شعبے کے امریکی صنعتی پیداواری ادارے لاک ہیڈ مارٹن کے پاس ہے۔

اس کنسورشیم میں فِنکانتیئری کا بحری جہاز تیار کرنے والا صنعتی یونٹ فِنکانتیئری مارینَیٹے مارینے یا FMM بھی شامل ہے اور یہ معاہدہ امریکا کے بیرون ملک فوجی ساز و سامان کی فروخت کے پروگرام کا حصہ ہے۔

اطالوی شپ بلڈنگ کمپنی Fincantieri کے مطابق وہ سعودی عرب کے لیے یہ چار بحری جہاز امریکی ریاست وسکونسن میں اپنے ذیلی ادارے مارینَیٹے کے ایک شپ یارڈ میں تیار کرے گی۔

یہ چاروں لڑاکا بحری جہاز ایسے ہوں گے، جنہیں سمندر میں جنگی نوعیت کے مقاصد کے لیے کئی طرح کے عسکری مشنوں میں استعمال کیا جا سکے گا۔

اس بیان میں فِنکانتیئری کے چیف ایگزیکٹیو جوزیپے بونو نے کہا کہ اس معاہدے کے ملنے سے ان کی ''کمپنی کو اس امریکی منڈی میں بھی اپنی بےمثال ساکھ کو مزید مستحکم بنانے میں مدد ملی ہے، جو بہت ہی پیچیدہ مارکیٹ سمجھی جاتی ہے۔‘‘

فِنکانتیئری کے اسی بیان کے مطابق لاک ہیڈ مارٹن اور فِنکانتیئری کا ذیلی ادارہ FMM چند دیگر سپلائر اداروں کے ساتھ مل کر امریکی نیوی کے 'لِٹّورل جنگی بحری جہاز‘ کی تیاری کے پروگرام میں بھی تعاون کر رہے ہیں۔