مودی اور ٹرمپ کے ہیوسٹن اجلاس پر چھائے بارِش کے بادل، شہر کے کئی علاقوں میں پانی

ہیوسٹن کے اجلاس کو صدر ٹرمپ کی شرکت کی وجہ سے بہت دلچسپی کے ساتھ دیکھا جا رہا ہے، لیکن شہر میں تین دن سے جاری بارش نے جوش پر پانی پھیر دیا ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

تازہ خبروں کے مطابق امریکہ کا شہر ہیوسٹن سیلاب میں ڈوبا ہوا ہے۔ اس شہر میں 26 ستمبر کو وزیر اعظم مودی اور امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ ہندوستانی نژاد امریکی شہریوں سے خطا ب کریں گے۔ اس شہر میں گزشتہ تین دن سے بھاری بارش ہو رہی ہے جس کی وجہ سے شہر کے کئی علاقوں میں پانی بھر گیا ہے اور اگر یہ صورتحال برقرار رہی تو وزیر اعظم مودی کا ’ہاؤڈی مودی ‘ پروگرام متاثر ہو سکتا ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا

واضح رہے کہ مودی کی یہ تقریب ہیوسٹن شہر کے این آر جی اسٹیڈیم میں ہوگی اور اس اسٹیڈیم کے آس پاس کا علاقہ پانی میں ڈوبا ہوا ہے۔ کئی علاقوں میں پانی دس فٹ تک بھر گیا تھا جس کی وجہ سے ٹریفک سگنل بھی پانی میں ڈوب گئے ہیں۔ اس شہر کے کئی علاقوں میں کاریں پانی میں ڈوبی نظر آ رہی ہیں جبکہ کچھ علاقوں میں مقامی شہری اور بچے پانی میں کھیلتے بھی نظر آ رہے ہیں۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا

ہیوسٹن کے مہاتما گاندھی ڈسٹرکٹ علاقہ کی پارکنگ میں آدھا درجن سے زیادہ کار اور ٹرک پانی میں ڈوبے نظر آ رہے ہیں اور کچھ علاقوں میں تو پانی اتنا بھر گیا ہے کہ لوگوں کو گھر سے نکلنے کے لئے کشتی کا استعمال کرنا پڑ رہا ہے۔ شہر کی انتظامیہ نے پانی کی بڑھتی رفتار کو دیکھتے ہوئے اگلے حکم تک میٹرو اور بس سروسز بند کر دی ہیں۔ اتنا ہی نہیں یہاں پر اسکولوں میں چھٹی کا اعلان کر دیا گیا ہے اور یہ چھٹیاں اگلے جمعہ تک جاری رہیں گی۔ اتنا ہی نہیں، ٹیکساس علاقہ میں سیلاب کا الرٹ جاری کر دیا گیا ہے اور شہریوں کو محفوظ مقام پر لے جانے کے لئے کہا گیا ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا

واضح رہے کہ امریکہ میں مقیم ہندوستانی تارکینِ وطن نے صدر ٹرمپ سے اس تقریب میں شرکت کی درخواست کی تھی جسے انہوں نے منظور کر لیا تھا،اور یہ پہلا موقع ہوگا جب صدر ٹرمپ اور ہندوستانی وزیرِ اعظم مودی کسی تقریب سے ایک ساتھ خطاب کریں گے۔توقع کی جا رہی ہے کہ اس تقریب میں 50 ہزار ہندوستانی نژاد امریکی شہری شرکت کریں گے۔ ہیوسٹن میں ڈیڑھ لاکھ ہندوستانی تارکینِ وطن آباد ہیں۔

Published: 20 Sep 2019, 12:10 PM