نوجوانوں کا مستقبل تاریکی میں، یوپی میں روزگار صرف اعداد و اشتہارات میں ہے:اکھلیش

بی جے پی والے سب کچھ فروخت کررہے ہیں۔ ان کے ہاتھ میں جو آئے گا وہی فروخت ہوجائے گا، منافع والی کمپنیاں فروخت کی جارہی ہیں۔

فائل تصویر آئی اے این ایس
فائل تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

سماج وادی پارٹی(ایس پی)سربراہ و سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو نے آج یہاں یوگی حکومت کو ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا کہ اترپردیش میں روزگار صرف اعداد و اشتہارات میں ہیں حقیقت میں کچھ نہیں ہے۔ نوجوانوں کا مستقبل تاریکی میں ہے۔

ایس پی سربراہ نے کل چھبرا مئو تحصیل کے سرائے پریاگ میں کپتان سنگھ یونیورسٹی احاطے میں ایس پی کے فاونڈر ممبر و سابق ضلع صدر کپتان سنگھ یادو کی مورتی کی نقاب کشائی کی اور اس کے بعد ایک ریلی سے خطاب کیا۔ اس موقع پر انہوں نے اپنے میعاد کار کے کاموں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ سماجوادی پارٹی کے کاموں کو ہم شمار نہیں کرانا چاہتے۔اب آپ ہی بتاؤ جنہوں نے کام نہیں کیا ہے ان سے کام کرنےو الوں کا کیا موازنہ ہوسکتا ہے۔ سوال یہ ہے آیا کسانوں کی آمدنی دوگنی ہوئی یا نہیں؟


انہوں نے طنزیہ انداز میں کہا کہ اجولا اسکیم حقیقت میں 'بجھلا' اسکیم ہے۔ بی جے پی کا سب سے مقبول ترین کام بیت الخلاء بنانا ہے۔ بیت الخلاء بنائے تو اس کا کیا کام ہورہا ہے۔ سب اچھی طرح سے واقف ہیں۔بی جےپی کا کوئی مستقبل نہیں ہے ۔اس حکومت میں نہ روزگار ہے نہ کاروبار۔نوکریاں فروخت کی جارہی ہیں۔ بی جے پی والے سب کچھ فروخت کررہے ہیں۔ ان کے ہاتھ میں جو آئے گا وہی فروخت ہوجائے گا۔ منافع والی کمپنیاں فروخت کی جارہی ہیں۔

اکھلیش نے کہا کہ بی جے پی والے ہر پل نیا جھوٹ بولتے ہیں۔ بی جے پی کے لیڈر نے باہر جا کر کہا کہ ہندوستان میں جمہوریت زندہ ہے۔کیا آپ لوگوں نے بلاک پرمکھ،ضلع پنچایت انتخابات میں زندہ جمہوریت کو دیکھا ہے۔ بلاک پرمکھ وضلع پنچایت کے انتخابات میں پولیس و ڈی ایم نے لوٹ پاٹ کی۔ آج جھوٹے مقدمے ایس پی کے لوگوں پر عائد کئے جارہے ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔