ویلنٹائن ڈے پر ’شاہین باغ‘ نے پی ایم مودی کو بھیجا ’پیار بھرا پیغام‘

14 فروری کو ویلنٹائن ڈے کے مدنظر وزیر اعظم نریندر مودی کو ’شاہین باغ‘ کی خواتین نے پیار کا پیغام بھیجا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ ’’پی ایم مودی جی، آپ آئیے اور ہم سے بات کیجیے، نفرت مت کیجیے۔‘‘

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

دہلی کے شاہین باغ میں شہریت ترمیمی قانون اور این آر سی کے خلاف تقریباً دو مہینے سے مظاہرہ کر رہی خواتین کا کہنا ہے کہ 14 فروری یعنی آج ویلنٹائن ڈے پر وہ وزیر اعظم نریندر مودی کو پیار کا پیغام دینا چاہتی ہیں۔ شاہین باغ میں گزشہ تقریباً دو مہینے سے خواتین اور بچے سڑک پر بیٹھ کر مظاہر کر رہے ہیں جس کی وجہ سے کالندی کنج-سریتا وہار روڈ بند ہے۔ مظاہرہ کرنے والی خواتین کا کہنا ہے کہ ’’حکومت کا کوئی نمائندہ آئے، ہم سے بات کرے اور ہم کو یقین دلائے کہ حکومت قانون واپس لے رہی ہے۔‘‘

ویلنٹائن ڈے پر وزیر اعظم نریندر مودی کے نام پیغام بھیجنے کا سلسلہ جمعرات کو ہی سوشل میڈیا پر شروع ہوگیا تھا جس میں ہیش ٹیگ ’مودی تم کب آؤگے‘ خوب وائرل ہو رہا ہے۔ وزیر اعظم نریندر مودی کے لیے شاہین باغ کے لوگ احتجاج کے مقام پر ’ٹیڈی بیئر‘ لے کر پہنچے اور یہ پیغام دینے کی کوشش کی کہ ’’وزیر اعظم مودی جی، آپ آئیے اور ہم سے بات کیجیے، نفرت مت کیجیے۔‘‘ 13 فروری کو احتجاجی مظاہرہ میں ایک خاتون نے یہ پیغام دیا کہ’’شاہین باغ آئیے، پیار کے تہوار کا جشن منایئے، پیار بانٹیے اور اپنا تحفہ لے کر جائیے۔‘‘

ویسے شاہین باغ کے کچھ مظاہرین پی ایم نریندر مودی کے لیے ویلنٹائن ڈے پر خاص پیغام بھیجنے سے سے خفا بھی نظر آ رہے ہیں۔ کچھ خواتین کا کہنا ہے کہ جامعہ میں دو دن پہلے طلبا کے ساتھ مار پیٹ کی گئی اور اب اس طرح کا پیغام شاہین باغ سے بھیجنا ایک غلط قدم ہو سکتا ہے۔

next