’سپریم کورٹ کے فیصلہ کا خیرمقدم لیکن بابری مسجد کے قصورواروں کو بھی سزا ملے‘

مارکسی کمیونسٹ پارٹی نے بابری مسجد رام جنم بھومی تنازعہ مقدمہ پر سپریم کورٹ کے فیصلے کا خیر مقدم کیا ہے لیکن بابری مسجد منہدم کرنے کے قصورواروں کو سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا

یو این آئی

نئی دہلی: مارکسی کمیونسٹ پارٹی نے بابری مسجد رام جنم بھومی تنازعہ مقدمہ پر سپریم کورٹ کے فیصلے کا خیر مقدم کیا ہے لیکن بابری مسجد منہدم کرنے کے قصورواروں کو سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

سی پی ایم پولٹ بیورو نے آج یہاں جاری ایک بیان میں کہا کہ پارٹی کا ابتدا سے ماننا تھا کہ ایودھیا کے فیصلے کو آپس میں مل کر سلجھایا جائے لیکن اگر معاملہ نہیں سلجھتا ہے تو سپریم کورٹ کے فیصلے کو تسلیم کیا جائے۔ عدالت نے ایک اہم منصفانہ فیصلہ دیا ہے لیکن اس کے کچھ ایسے پہلو بھی ہیں جن پر اعتراضات کیے جا سکتے ہیں۔

پارٹی نے یہ بھی کہا کہ عدالت نے اب اس تنازعہ کو حل کر دیا ہے جس کا استعمال فرقہ ورانہ عناصر نے کیا جس سے تشد د ہوا اور لوگوں کی جانیں گئیں۔

پارٹی نے کہا کہ عدالت نے یہ بھی کہا ہے کہ بابری مسجد کو گرائے جانے کو غیر قانونی بتایا ہے۔ یہ ایک مجرمانہ واقعہ تھا اور سیکولر اصولوں پر حملہ تھا۔ مسجد کو گرائے جانے کے معاملے کو تیزی سے نمٹایا جانا چاہیے اور قصورواروں کو سزا دی جانی چاہیے۔ پارٹی نے تمام فریقین سے پرامن ماحول برقرار رکھنے کی اپیل کی ہے۔

Published: 9 Nov 2019, 4:43 PM