وی ایچ پی لیڈر کا گولی مار کر قتل، حملہ آور فرار

مدھیہ پردیش واقع مندسور میں یوراج سنگھ ہندوتوا ذہنیت کے حامل وی ایچ پی لیڈر تھے۔ انھیں ابھینندن نگر ریلوے انڈر پاس کے قریب گولیوں کا نشانہ بنایا گیا۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا

قومی آوازبیورو

وی ایچ پی لیڈر اور کیبل نیٹورک چلانے والے یوراج سنگھ چوہان کا کچھ شر پسند عناصر نے گولی مار کر قتل کر دیا جس کے بعد مدھیہ پردیش کے مندسور میں حالات کافی کشیدہ ہیں۔ میڈیا ذرائع سے موصول ہو رہی خبروں کے مطابق کچھ بدمعاش موٹر سائیکل پر سوار ہو کر آئے تھے جنھوں نے وی ایچ پی لیڈر یوراج پر گولیاں چلا دیں اور موقع سے فرار ہو گئے۔

بتایا جاتا ہے کہ مندسور میں یوراج سنگھ ہندوتوا ذہنیت کے حامل وی ایچ پی لیڈر تھے۔ انھیں ابھینندن نگر ریلوے انڈر پاس کے قریب گولیوں کا نشانہ بنایا گیا۔ یوراج اس وقت ایک ہوٹل کے پاس کھڑے تھے۔ اسی دوران موٹر سائیکل پر 3 نامعلوم حملہ آور آئے اور انھوں نے اندھا دھند فائرنگ شروع کر دی۔ گولی یوراج کے چہرے اور سر میں لگی۔ گولی لگتے ہی یووراج وہیں گر گئے۔ واقعہ کو انجام دینے کے بعد جب بدمعاش بھاگے تو لوگوں کی بھیڑ وہاں جمع ہو گئی۔

قابل ذکر ہے کہ یوراج سنگھ وی ایچ پی میں انتہائی اہم عہدہ پر فائز تھے۔ وہ پیشے سے وکیل تھے اور اپنا ایک کیبل نیٹورک ’ایس آر ایم‘ کے نام سے چلاتے تھے۔ بہر حال، موقع پر موجود لوگوں نے گولی لگنے کے بعد زمین پر گرے یوراج کو فوراً ضلع اسپتال پہنچایا، لیکن ڈاکٹروں نے انھیں مرد ہ قرار دے دیا۔

Published: 9 Oct 2019, 1:50 PM