چار دھام یاتر نہیں ہوگی، وزیر اعلی نے کہا کورونا کےچلتے ممکن نہیں

گزشتہ سال کی طرح اس سال بھی اتراکھنڈ حکومت نےچار دھام یاترا کو ابھی نہ کرانےکا اعلان کیا ہے ۔

فائل تصویر آئی اے این ایس
فائل تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

اتراکھنڈ کےوزیر اعلی تیرتھ سنگھ راوت نے چاردھام یاترا کو ملتوی کرنے کا اعلان کیا ہے ۔ انہوں نے کہا ہے کہ کورونا وبا سے پیدا ہوئے حالات کے پیش نظر یہ ممکن نہیں ہے۔ انہوں نے بتایا کپاٹ کھلیں گے اور پوجا ہوگی ۔

واضح رہے 14 مئی کو یمنوتری مندر کے کپاٹ کھلنے کے ساتھ ہی چار دھام یاترا شروع ہونی تھی لیکن اب یہ نہیں ہوگی۔واضح رہے گزشتہ سال بھی اتراکھنڈ حکومت نے کورونا وبا کی وجہ سے چار دھام یاترا کو مئی ماہ میں روک دیا تھا اور اس کے بعد ریاستی حکومت نے یکم جولائی سے یہ شروع کی تھی ۔ پہلے یہ صرف ریاست کے لوگوں کے لئے ہی کھولی گئی تھی لیکن بعد میں جولائی کے آخری ہفتہ میں دوسری ریاستوں کے لوگوں کوبھی مشروط اجازت دے دی گئی تھی۔


چار دھام یاترا کے نہ ہونے کی وجہ سے وہاں کی ہوٹل انڈسٹری کو زبردست نقصان ہوگا اور ان کی بڑے پیمانہ پر بکنگ کینسل ہو گی۔اس سال جنوری اور مارچ کے بیچ حالات کو دیکھتے ہوئے یہ امید کی جا رہی تھی کی چار دھام یاترا کے دوران کوئی پریشانی نہیں ہوگی اور بڑی تعداد میں لوگ آئیں گے لیکن اپریل میں جس تیزی کے ساتھ کورونا کے معاملوں میں اضافہ ہوا ہے اس کے بعد چار دھام یاترا کےہونے پر سوال کھڑے ہو گئے تھے۔واضح رہے سال 2019 میں 32 لاکھ عقیدتمندوں نے درشن کئے تھے جبکہ سال 2020 میں صرف تین لاکھ دس ہزار لوگوں نے ہی درشن کئے تھے۔

واضح رہے ریاستی اور مرکزی حکومت پہلے ہی کمبھ کے انعقاد کو لے کر تنقید جھیل رہی ہے اور کمبھ کو بھی وقت سے پہلے ہی ختم کرنا پڑا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔