اتر پردیش: نائی نے کیا دلتوں کے بال کاٹنے سے انکار، مقدمہ ہوا درج

واقعے کی ویڈیو بنانے والے ببلو کا کہنا ہے کہ جب انہوں نے سنا کہ نائی دلتوں کی توہین کرتا ہے تو اس نے ثبوت کے لئے اس کی ویڈیو بنائی۔ نائی پچھلے 15 سالوں سے اپنی دکان چلا رہا ہے۔

تصویر آئی اے این ایس
تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

بدایوں: اترپردیش کے ضلع بدایوں میں دلت برادری سے تعلق رکھنے والے لوگوں کے بال کاٹنے سے انکار کرنے پر ایک نائی کے خلاف ایس سی/ ایس ٹی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ یہ معاملہ اس وقت منظرعام پر آیا جب ایک ویڈیو کلپ وائرل ہوا جس میں نائی نے ایک دلت نوجوان کو اپنی دکان چھوڑنے کو کہا۔

بدایوں کے گاؤں کریامئی میں نائی کو یہ کہتے ہوئے سنا گیا کہ وہ اپنی دکان بند کرنا پسند کرے گا لیکن وہ دلت ذات کے نوجوانوں کے بال نہیں کاٹے گا۔ بلسی سرکل آفیسر (سی او) انیرودھ سنگھ نے کہا کہ مقامی لوگوں سے بات کرنے کے بعد ہمیں معلوم ہوا کہ حجام دلت برادری سے تعلق رکھنے والے لوگوں کو وہاں سے جانے کے لئے کہتا تھا۔ جو قابل قبول نہیں ہے۔ نائی کو جیسے ہی خبر ملی کہ اس کے خلاف ایف آئی آر ہو گئی ہے تو وہ فرار ہوگیا ہے۔

واقعے کی ویڈیو بنانے والے ببلو کا کہنا ہے کہ جب انہوں نے سنا کہ نائی دلتوں کی توہین کرتا ہے تو اس نے ثبوت کے لئے اس کی ویڈیو بنائی۔ نائی پچھلے 15 سالوں سے اپنی دکان چلا رہا ہے اور ببلو کے مطابق، ہمیشہ دلت گاہک کے بال کاٹنے سے انکار کرتا ہے۔ سرکل آفیسر نے بتایا کہ ویڈیو کلپ ایک اہم ثبوت ہے اور اسے فارنسک تفتیش کے لئے بھیجا گیا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔