اناؤ واقعہ پر راجیہ سبھا میں ہنگامہ، عصمت دری متاثرہ کو جلانے کے معاملہ میں سبھی 5 ملزمان گرفتار

پولس نے معاملہ میں 5 ملزموں کو گرفتار کیا ہے، متاثرہ کی حالت تشویشناک ہے اور اسے لکھنؤ کے اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے، حزب اختلاف نے اس معاملہ پر حکومت کو نشانہ بناتے ہوئے راجیہ سبھا میں ہنگامہ کیا

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: کانگریس سمیت اپوزیشن پارٹیوں نے جمعرات کو راجیہ سبھا میں وقفہ صفر کے دوران اناؤ عصمت دری معاملے پر بحث کی اجازت نہ دئے جانے پر ہنگامہ کیا جس کے بعد چیئرمین ایم وینکیا نائیڈو نے ایوان کی کارروائی کو ملتوی کر دیا۔ واضح رہے کہ اتر پردیش کے انناؤ ضلع میں عصمت دری کی ایک متاثرہ کو زندہ جلانے کا سنسنی خیز واقعہ پیش آیا ہے۔

پولس نے جمعرات کے روز اس معاملہ میں پانچ ملزموں کو گرفتار کیا ہے۔ متاثرہ کی حالت تشویشناک ہے اور اسے راجدھانی لکھنؤ کے سول اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ اسی معاملہ پر حزب اختلاف نے حکومت کو نشانہ بناتے ہوئے پارلیمان کے ایوان میں ہنگامہ کیا۔

ضروری کاغذات میز پر رکھے جانے کے بعد کانگریس اراکین نے اناؤ عصمت دری معاملے کی متاثرہ کو جلائے جانے کے واقعہ پر بحث کا مطالبہ کیا لیکن نائیڈو نے اس کی اجازت نہیں دی اور کہا کہ یہ معاملہ ایوان کی کارروائی کی فہرست میں نہیں ہے۔ اس پر اپوزیشن اراکین کھڑے ہو کر بلا تاخیر بحث کا مطالبہ کرتے ہوئے ایوان میں شوروغل کرنے لگے۔ نائیڈو نے اراکین سےنظام بنائے رکھنے کی اپیل کی لیکن اپوزیشن اپنے مطالبے پر بضد رہی ،جس کی وجہ سے انہوں نے ایوان کی کارروائی کو ملتوی کر دیا۔


اس واقعہ پر اناؤ کے ایڈیشنل سپرنٹنڈنٹ آف پولس ونود پانڈے نے کہا، ’’بہار پولس تھانہ علاقہ کے ہند ونگر گاؤں میں جمعرات کے روز ایک عصمت دری کی شکار لڑکی کو پیٹرول ڈال کر جلانے کی کوشش کی گئی۔ ملزمان کو پکڑنے کے لئے چار ٹیمیں تعینات کی گئی تھیں۔ پانچ ملزمان کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ پولس ان سے پوچھ گچھ کررہی ہے۔‘‘

غورطلب ہے کہ انناو کے بہار تھانہ علاقہ کے گاؤں ہندو نگر کی لڑکی کے ساتھ عصمت دری کی گئی تھی۔ اس کے بعد دو نامزد ملزمان کو گرفتار کرکے جیل بھیج دیا گیا تھا۔ خاتون اسی مقدمہ کی پیروی کے لئے رائے بریلی جا رہی تھی۔ جمعرات کی صبح چار بجے کے قریب، متاثرہ رائے بریلی جانے کے لئے ٹرین پکڑنے بیسواڑہ اسٹیشن کے لئے نکلی تھی، اسی وقت دونوں ملزمان اور ان کے تین ساتھیوں نے گاؤں کے باہر کھیت میں مبینہ طور پر متاثرہ پر پیٹرول ڈال کر آگ لگا دی۔

بہار تھانہ کے ہندونگر گاؤں میں 12 دسمبر 2018 کو متاثرہ کو اغوا کر کے رائے بریلی ضلع کے لال گنج تھانہ علاقہ میں اس کی عصمت دری کی گئی تھی اور اس معاملہ میں شیوم تریویدی اور شبھم ترویدی کے خلاف تھانہ لال گنج میں نامزد مقدمہ درج کرایا گیا تھا۔ معاملہ کی سماعت رائے بریلی ضلع عدالت میں چل رہی ہے۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


Published: 05 Dec 2019, 2:45 PM