یوپی: مدارس کے اوقات میں ایک گھنٹہ کا اضافہ، 6 گھنٹے فرائض انجام دیں گے اساتذہ

نئے ٹائم ٹیبل کے مطابق طلبا مدارس میں صبح 9 بجے سے دوپہر 3 بجے تک کلاسز میں شرکت کریں گے جو کہ ایک گھنٹہ زیادہ ہے۔ اساتذہ اور عملہ بھی کم از کم 6 گھنٹے فرائض انجام دے گا

مدرسہ (علامتی تصویر)
مدرسہ (علامتی تصویر)
user

قومی آوازبیورو

لکھنؤ: اتر پردیش مدرسہ ایجوکیشن بورڈ کے صدر افتخار احمد جاوید نے ریاستی حکومت سے منسلک تمام مدارس کو ہدایات جاری کی ہیں کہ وہ طلبہ کے لیے چھ گھنٹے کی تعلیم کو یقینی بنائیں، تاکہ انھیں دوسرے اسکولوں کی سطح پر لایا جاسکے۔ یہ حکم یکم اکتوبر سے نافذ العمل ہوگا۔

نئے ٹائم ٹیبل کے مطابق طلبا مدارس میں صبح 9 بجے سے دوپہر 3 بجے تک کلاسز میں شرکت کریں گے جو کہ ایک گھنٹہ زیادہ ہے۔اساتذہ اور عملہ بھی کم از کم 6 گھنٹے فرائض انجام دے گا۔

جاوید نے کہا، "مدرسہ کے طالب علم کو معاشرے میں آگے بڑھتے ہوئے احساس کمتری کا شکار نہیں ہونا چاہیے، اسے مذہبی مضامین کے ساتھ ساتھ ریاضی، سائنس، انگریزی اور ہندی کا بھی اچھا علم ہونا چاہیے۔ ہم ایسے مثالی طلبہ تیار کرنا چاہتے ہیں جو ملک کی ترقی میں اپنا حصہ ڈال سکتے ہیں۔"


انہوں نے مزید کہا، "ہم چاہتے ہیں کہ مدارس دوسرے اچھے اسکولوں کے معیار کے برابر ہوں تاکہ دیگر لوگ بھی اپنے بچوں کی معیاری تعلیم کے لیے مدارس میں فخر سے داخلہ دلا سکیں، ہمیں سب سے پہلے مدارس کی تعلیم کے تئیں احترام پیدا کرنا چاہئے۔" انہوں نے کہا کہ عربی، فارسی، دینیات اور اردو جیسے مذہبی مضامین کے ساتھ ساتھ سائنس، ریاضی، انگریزی اور ہندی کی کلاسز بھی روزانہ لگیں گی۔

انہوں نے کہا، ’’حکومت بھی چاہتی ہے کہ اساتذہ نئے ٹائم ٹیبل کے مطابق کام کریں۔ دن کا آغاز صبح 9 بجے دعا سے ہوگا جس کے بعد قومی ترانہ ہوگا، اس کے بعد دوپہر تک کلاسز جاری رہیں گی۔ طلبا اور عملے کے لیے لنچ 12 بجے ہوگا۔ یہ دوپہر 12 سے ​​12.30 بجے تک ہوگا، اس کے بعد 3 بجے تک کلاسز ہوں گی، تمام مدارس کو اپنے نظام الاوقات پر سختی سے عمل کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔‘‘

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔