یوپی: گذشتہ 6 مہینوں میں ایک لاکھ 60 ہزار سے زیادہ نئے راشن کارڈ جاری

اتر پردیش حکومت نے گذشتہ 6 مہینوں میں نیشنل فوڈ سیکورٹی ایکٹ (این ایف ایس اے) کے تحت مجموعی طور سے 161256 نئے راش کارڈ جاری کئے ہیں

اسکرین شاٹ
اسکرین شاٹ
user

یو این آئی

لکھنؤ: اتر پردیش حکومت نے گذشتہ 6 مہینوں میں نیشنل فوڈ سیکورٹی ایکٹ (این ایف ایس اے) کے تحت مجموعی طور سے 161256 نئے راش کارڈ جاری کئے ہیں۔ جس کے بعد ریاست میں مجموعی راشن کارڈ ہولڈروں کی تعداد 36012758 ہو گئی۔

اتر پردیش میں پبلک ڈسٹریبیوشن سسٹم (پی ڈی ایس) گذشتہ سالوں میں مکمل طور سے تبدیلی و شفافیت کے عمل سے گذر رہا ہے ۔وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کی کوششوں سے حکومت اس بات کو یقینی بنانے کی کوشش کر رہی ہے کہ زیادہ سے زیادہ غریب اور ضرورت مند شخص اس سے مستفید ہو سکے۔


حکومت کی کوششوں سے 100 فیصد (99.97 فیصد) راشن کارڈ کو آڈھار کارڈ سے منسلک کیا جا چکا ہے۔ جس سے پبلک ڈسٹری بیوشن سسٹم میں قابل ذکر شفافیت آئی ہے۔ جو کہ ایک سنگ میل کے مترادف ہے۔ملک کے دوسری کسی بھی ریاست میں اتنے بڑے پیمانے پر راشن کارڈ کو آڈھار سے منسلک کیا گیا ہے۔

راشن کارڈ سے آڈھار کارڈ کی منسلکی سے بے ضابطگیوں پر کنٹرول حاصل ہوا ہے اور یہ بات یقینی بنائی گئی ہے کہ اس سے انہیں لوگوں کو فائدہ ملے جو اس کے مستحق ہیں۔علاوہ ازین ای۔پاس مشیش(پوائنٹ آف سیل)کے متعارف کرانے سے ڈیلرس کی جانب سے کی جانی والی بدعنوانی پر قدغن لگا ہے۔یوگی حکومت اس بات کہ ہر ممکن کوشش کررہی ہے کہ صرف مستحقین کو ہی راشن ملے۔


حکومت کے جانب سےاس بات کے بھی انتظامات کئے گئے ہیں ایسے شخص کا انگوٹھا نہ لگ سکے وہ بھی راشن سے محروم نہ ہو ۔ ایسے مسائل کا شکار ہونے والے شخص کو آدھار سے منسلک موبائل نمبر پر او ٹی پی کے ذریعہ انہیں راشن دستیاب کرایا جائے گا۔

یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ کورونا وبا کی پہلی لہر میں یوگی حکومت نے مستحق کالڈ ہولڈروں کے درمیان آٹھ مہینوں تک مفت راشن تقسیم کیا تھا۔ریاستی حکومت نے اپریل سے نومبر کے درمیان فی یونٹ 5کلو کے اعتبار سے 60لاکھ میٹرک ٹن اناج مفت میں تقسیم کیا تھا۔جو کہ ملک میں ایک ریکارد ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔