یو پی: جج محمد احمد خان پر قاتلانہ حملہ، تیز رفتار کار نے ماری ٹکر

اتر پردیش کے فتح پور میں تعینات ایڈیشنل ضلع اور سیشن جج محمد احمد خان کی کار کو کوشامبی ضلع میں ایک تیز رفتار اینووا گاڑی نے زوردار ٹکر مار دی، اس واقعہ میں جج محمد احمد خان زخمی ہو گئے۔

تصویر آئی اے این ایس
تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

اتر پردیش کے فتح پور میں تعینات ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج (اے ڈی جے) محمد احمد خان کوشامبی ضلع میں اس وقت زخمی ہو گئے جب ان کی کار کو اینووا نے زوردار ٹکر مار دی۔ حادثہ جمعرات کی شب اس وقت پیش آیا جب اے ڈی جے پریاگ راج سے فتح پور لوٹ رہے تھے۔ حادثہ میں محمد احمد خان کے علاوہ ان کا گنر بھی زخمی ہو گیا۔ اے ڈی جے نے الزام عائد کیا ہے کہ ان کا قتل کرنے کے ارادے سے کار کو ٹکر ماری گئی۔

محمد احمد خان فتح پور میں پوکسو کورٹ میں خصوصی جج کے عہدہ پر تعینات ہیں۔ وہ جمعرات کو کسی ذاتی کام سے پریاگ راج گئے تھے۔ وہاں سے شام کو وہ فتح پور لوٹ رہے تھے۔ وہ ابھی کوکھراج کے چکواں چوراہے کے قریب ہی پہنچے تھے کہ ان کی کار کو تیز رفتار اینووا نے ٹکر مار دی۔ حادثہ کے بعد آس پاس کے لوگوں کی مدد سے ملزم ڈرائیور کو گاڑی سمیت پکڑ لیا گیا۔


اے ڈی جے نے کوکھراج پولیس کو دی گئی اپنی شکایت میں الزام لگایا ہے کہ ان کی کار کو تیز رفتار اینووا نے جان سے مارنے کے ارادے سے ٹکر ماری۔ کوکھراج انسکٹر گیان سنگھ یادو نے کہا کہ شکایت ملی ہے اور جانچ جاری ہے۔ اے ڈی جے نے اپنی شکایت میں کہا کہ انھیں پہلے بھی دھمکیاں ملی تھیں۔ بریلی میں پوسٹنگ کے دوران دسمبر 2020 میں کسی جرائم پیشہ کی ضمانت خارج کرنے پر فیملی سمیت جان سے مارنے کی دھمکی دی گئی تھی۔ جرائم پیشہ کوشامبی کا رہنے والا تھا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


Published: 30 Jul 2021, 4:40 PM