مرکز کی ساری امداد بی جےپی ریاستوں کو اورمہاراشٹر کےساتھ امتیازی سلوک: کانگریس

مرکزی حکومت نے مہاراشٹر کو 40 ممالک سے ملنے والے امدادی سامان کی تقسیم کے لئے ریاستوں کی فہرست سے باہر رکھا ہے۔

سچن ساونت
سچن ساونت
user

یو این آئی

مہاراشٹر کانگریس کے جنرل سکریٹری اور ترجمان سچن ساونت نے جمعہ کے روز کہا کہ یہ بات واضح ہے کہ مودی حکومت مہاراشٹرسے کورونا وائرس کے معاملے میں بھی امتیازی سلوک کررہی ہے۔

مسٹر ساونت نے الزام لگایا کہ مرکزی حکومت نے مہاراشٹر کو 40 ممالک سے ملنے والے امدادی سامان کی تقسیم کے لئے ریاستوں کی فہرست سے باہر رکھا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بیرون ملک سے آنے والے امدادی سامان کو سب سے پہلے مرکز نے قبضے میں لے لیا اور جب انہوں نے امدادی سامان کی تقسیم شروع کی، تو مہاراشٹر کو چھوڑ کر بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی زير اقتدار ریاستوں اتر پردیش، مدھیہ پردیش، گجرات، ہریانہ ، بہار اور دیگر کو امدادی فراہم کیا جارہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ کانگریس پارٹی مرکزی حکومت کی اس طرح کی حرکت کی شدید مذمت کرتی ہے اور مہاراشٹر کے عوام بی جے پی اور ریاست مین حزب اختلاف کے لیڈر دیویندر فڑنویس سے اس ناانصافی پر جواب چاہتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اب تک تقریبا 25 طیارے بیرونی ممالک سے امدادی سامان لے کر ملک پہنچ چکے ہیں۔ ان ممالک میں ہندنژاد بہت سے لوگ ملک میں اپنی متعلقہ ریاستوں کی مدد کرنا چاہتے ہیں۔ بین الاقوامی امداد پانے کا ریاستی حکومتوں کا حق ہے مگر یہ امداد براہ راست ریاستوں کو کیوں فراہم نہیں کی جارہی ہے؟

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔