کشمیر میں ’حملہ آوروں‘ نے 5 مزدوروں کا قتل کیا

جموں کشمیر کے کولگام میں منگل کی رات نامعلوم حملہ آوروں نے پانچ بیرونی مزدوروں کا قتل کر دیا اور دیگر ایک کو زخمی کر دیا

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

سرینگر: جموں کشمیر کے کولگام میں منگل کی رات نامعلوم حملہ آوروں نے پانچ بیرونی مزدوروں کا قتل کر دیا اور دیگر ایک کو زخمی کر دیا۔ سرکاری ذرائع نے يواین آئی کو بتایا کہ کولگام کے كاٹروسو علاقے میں نامعلوم مسلح افراد نے آج بیرونی مزدوروں کے ایک گروپ پر گولیاں چلائی جس میں چھ مزدوروں کو گولیاں لگی اور انہیں فوری طور پر ہسپتال لے جایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے پانچ مزدوروں کو مردہ قرار دے دیا۔

انہوں نے کہا کہ مسلح شخص اندھیرے کا فائدہ اٹھاتے ہوئے موقع سے فرار ہونے میں کامیاب رہے۔ انہوں نے کہا کہ سیکورٹی فورسز نے حملہ آوروں کو پکڑنے کے لئے ایک مہم چلائی ہے۔ تمام مزدور مغربی بنگال کے رہنے والے تھے۔ غور طلب ہے کہ گزشتہ 24 گھنٹوں میں یہ دوسرا اور گزشتہ 15 دنوں میں چھٹا حملہ ہے۔ یہ حملہ اس وقت ہوا جب یورپی یونین کا 23 پارلیمانی وفد یہاں دو روزہ دورے پر آیا ہوا ہے۔ مرکزی حکومت نے 5 اگست کو جموں کشمیر سے خصوصی ریاست کا درجہ ختم کرکے دفعہ 370 اور آرٹیکل 35 اے کو غیر مؤثر کر دیا تھا۔

اس سے پہلے پیر کی رات کو بھی کچھ نامعلوم حملہ آوروں نے کشمیر کے اننت ناگ ضلع میں جموں کے ایک ڈرائیور کا قتل کر دیا تھا۔ اس کے علاوہ جنوبی کشمیر میں گزشتہ ہفتے نامعلوم حملہ وروں نے دو ٹرک ڈرائیوروں کا قتل اور ایک کو زخمی کر دیا تھا۔

Published: 30 Oct 2019, 5:53 AM