شملہ: شیو مندر کے ملبہ سے دو مزید لاشیں برآمد، اب بھی کئی لوگوں کے لاپتہ ہونے کا اندیشہ، تلاشی مہم جاری

پیر سے اب تک شملہ میں لینڈ سلائڈنگ سے جڑے دو واقعات میں مہلوکین کی تعداد بڑھ کر 16 ہو گئی ہے، جبکہ ریاست ہماچل پردیش میں یہ تعداد 53 ہو گئی ہے۔

<div class="paragraphs"><p>تصویر آئی اے این ایس</p></div>

تصویر آئی اے این ایس

user

قومی آوازبیورو

شملہ میں بچاؤ اہلکاروں نے منگل کو بھگوان شیو کے مندر کے ملبہ سے دو مزید لاشیں برآمد کی ہیں۔ ابھی کئی دیگر لوگوں کے لاپتہ ہونے کا بھی اندیشہ ہے۔ ایک دن قبل ہماچل پردیش کی راجدھانی شملہ کے سمر ہل علاقے میں موسلادھار بارش کے سبب لینڈ سلائڈنگ ہوا تھا، جس میں کئی لوگ دب گئے تھے۔

پیر کے روز سے اب تک شملہ میں لینڈ سلائڈنگ سے جڑے دو واقعات پیش آئے ہیں جن میں مہلوکین کی تعداد بڑھ کر 16 ہو گئی ہے، جبکہ ریاست ہماچل پردیش میں یہ تعداد 53 ہو گئی ہے۔ شملہ میں مزید ایک لینڈ سلائڈنگ پھاگلی علاقہ میں ہوا، جس میں پانچ لوگوں کی جان چلی گئی۔


14ویں این ڈی آر ایف کی دو ٹیموں نے تلاشی اور بچاؤ مہم چلائی اور شیو باؤڑی کے پاس سمر ہل سے دو لاشیں برآمد کی ہیں۔ این ڈی آر ایف نے کہا ہے کہ آپریشن ابھی جاری ہے۔ نیشنل ڈیزاسٹر رد عمل فورس کے علاوہ فوج، پولیس اور ریاستی ڈیزاسٹر رد عمل فورس کی ٹیمیں تلاشی مہم چلا رہی ہیں۔

شیو مندر والی جگہ میں کم از کم ایک درجن لوگوں کے دبے ہونے کا اندیشہ ہے۔ حادثہ کے بعد وزیر اعلیٰ سکھوندر سنگھ سکھو نے مندر دھنسنے کی حالت کا جائزہ لیا اور افسران کو بچاؤ مہم تیز کرنے کی ہدایت دی۔ وزیر اعلیٰ نے میڈیا کو بتایا کہ ساون کے پاکیزہ مہینے کے سبب آفت کے وقت بھگوان شیو کے مندر میں بھیڑ تھی۔ انھوں نے کہا کہ بھاری لینڈ سلائڈنگ کے سبب کئی لوگوں کے ملبہ میں پھنسے ہونے کا اندیشہ ہے۔


لوگوں کی تلاشی کے لیے ملبہ ہٹانے کا کام جاری ہے۔ وزیر اعلیٰ سکھو نے کہا کہ پوری ریاست سنگین حالت سے نبرد آزما ہے کیونکہ کئی حصوں میں بادل پھٹنے اور لینڈ سلائڈنگ سے جان و مال کا زبردست نقصان ہوا ہے۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


;