تریپورہ: کورونا کے تعلق سے بڑے پیمانے پر بدانتظامی، کانگریس کا حکومت سے ’قرطاس ابیض‘ جاری کرنے کا مطالبہ

تریپورہ حکومت نے کورونا متاثرہ ہر ایک کنبہ کو دس لاکھ روپے کا معاوضہ دینے کا اعلان کیا ہے۔ ریاست میں کورونا سے 675 لوگوں کی موت ہوئی ہے، لیکن اب تک کسی کو بھی امدادی رقم حاصل نہیں ہوئی ہے۔

تریپورہ کانگریس / ٹوئٹر
تریپورہ کانگریس / ٹوئٹر
user

یو این آئی

اگرتلہ: تریپورہ میں کانگریس نے کورونا وائرس (کووڈ۔19) کا پتہ لگانے اور علاج میں بڑے پیمانہ پر بدانتظامی کا الزام لگاتے ہوئے وبا کے خلاف ریاستی حکومت کی طرف سے اب تک کی گئی کوششوں و کارروائی پر قرطاس ابیض (وائٹ پیپر) جاری کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

کانگریس نے محکمہ صحت کے ڈائریکٹر کو میمورنڈم سونپ کر گزشتہ برس کورونا انفیکشن، بیماری، اموات، متوفیوں کے نام اور متاثرہ کنبوں کو دی گئی راحت کے بارے میں تفصیلی معلومات دینے کی مانگ کی۔ تریپورہ حکومت نے کورونا متاثرہ ہر ایک کنبہ کو دس لاکھ روپے کا معاوضہ دینے کا اعلان کیا ہے۔ ریاست میں کورونا سے 675 لوگوں کی موت ہوئی ہے، لیکن اب تک کسی کو بھی امدادی رقم حاصل نہیں ہوئی ہے۔


کانگریس نے الزا م لگایا کہ پہلے کورونا سے مرنے والوں کے کنبوں کو کووڈ سے متاثرہ کی تفصیلات ضلع مجسٹریٹ کے پاس جمع کرانے کے لئے کہا گیا ہے اور اس کے بعد جانچ ہوگی۔ پھر متعلقہ کنبہ کو امدادی رقم دی جائے گی جو محض دکھاوا لگتا ہے۔

کانگریس کے ترجمان تاپس ڈے نے ریاستی حکومت پر کووڈ سے متعلق سرٹی فکیٹ جاری کرنے میں دھوکہ کا الزام لگایا ہے۔ خواہ کووڈ اسپتال میں اموات ہوئی ہیں۔ لاشوں کو کووڈ پروٹوکول کے مطابق نپٹایا گیا لیکن موت سرٹی فکیٹ میں موت کی وجہ کا ذکر نہیں ہے۔


انہوں نے کہا کہ ہم نے کورونا کی صورتحال سے نپٹنے کے لئے حاصل مجموعی مرکزی رقم اور ریاستی حکومت کی طرف سے کیے گئے اخراجات کی معلومات مانگی ہے۔ ہم نے ریاست کی مکمل آبادی کی جانچ کی بھی مانگ کی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔