ریاستیں رعایتیں رہنما ہدایات کے مطابق نافذ کریں: شاہ

جو علاقہ ہاٹ اسپاٹ /کلسٹرس/کنٹینمنٹ زون میں نہیں آتے اور جن میں کچھ سرگرمیوں کی اجازت دی جارہی ہے وہاں احتیاط برتنا ضروری ہیں

سوشل میڈیا 
سوشل میڈیا
user

یو این آئی

مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے حکام سے کہا کہ وہ کورونا وبا کی وجہ سے پورے ملک میں نافذ مکمل لاک ڈاون کے مدنظر جاری رہنما ہدایات میں پیر سے کچھ سرگرمیوں میں چھوٹ کے التزامات کے بارے میں ریاستوں اور مرکز کے زیرانتظام ریاستوں کے ساتھ اہم نکات پر بات چیت کریں جس سے پورے ملک میں صورتحال کو کنٹرول میں رکھا جاسکے۔

وزارت داخلہ کے آج جاری بیان میں کہا گیا کہ مسٹر شاہ نے سنیچر کو میٹنگ میں مختلف ریاستوں میں کورونا وبا کی وجہ سے پیدا ہوئے حالات کا جائزہ لیا۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وباکے خلاف مہم جاری ہے اس لئے مکمل لاک ڈاون کی پابندیوں کے ساتھ وقتاّّ فوقتاّ دی جانے والی ہدایات پر سختی سے عمل کیا جانا چاہئے۔


انہوں نے کہاکہ جو علاقہ ہاٹ اسپاٹ /کلسٹرس/کنٹینمنٹ زون میں نہیں آتے اور جن میں کچھ سرگرمیوں کی اجازت دی جارہی ہے وہاں احتیاط برتنا اور یہ یقینی بنا نا ضروری ہے کہ چھوٹ صرف حقیقی صورتحال کے جائزہ کے بعد دی جائے گی۔

وزیر داخلہ نے کہا کہ معیشت کو مضبوطی فراہم کرنے کے لئے دیہی علاقوں میں کچھ اقتصادی سرگرمیوں کی اجازت دی گئی ہے۔ اس لئے ضلع مجسٹریٹوں کو صنعتی گروپوں کے تعاون سے، ریاست کے اندر ہی مزدوروں کو ان کے کام کرنے کی جگہ پر پہنچانے کا انتظام کرنا چاہئے۔ حکومت کا خیال ہے کہ اس سے نہ صرف اقتصادی سرگرمیوں کو رفتار ملے گی بلکہ مزدوروں کو روزگار کے مواقع بھی ملنے لگیں گے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔