’اتر پردیش میں بی جے پی سے لڑنے کی ضرورت نہیں، وہ آپس میں ہی لڑ مریں گے‘

اتر پردیش بی جے پی کے کئی لیڈران مرکزی قیادت سے ملاقات کر چکے ہیں اور ایسا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے کہ جلد ہی یوگی کابینہ میں رد و بدل ہو سکتا ہے۔

وگی آدتیہ ناتھ، تصویر آئی اے این ایس
وگی آدتیہ ناتھ، تصویر آئی اے این ایس
user

تنویر

اتر پردیش میں اسمبلی انتخابات کی تیاریاں ابھی سے ہی زوروں پر ہیں۔ سبھی سیاسی پارٹیاں منصوبہ بندی میں لگی ہوئی ہیں اور کئی پارٹیوں نے تو امیدواروں کے تعلق سے غور و خوض کرنا شروع کر دیا ہے۔ اس درمیان بی جے پی کے لیے سب سے بڑا مسئلہ یہ ہے کہ ان کے لیڈران آپسی رنجش میں مبتلا ہیں جو آئندہ اسمبلی انتخابات میں پارٹی کو نقصان پہنچا سکتے ہیں۔ سماجوادی پارٹی ترجمان آشوتوش شرما نے بھی اس تعلق سے ایک ٹی وی شو میں تذکرہ کیا اور کہا کہ بی جے پی کے لیے پریشانی خود ان کی پارٹی کے لیڈران ہیں جو آپس میں لڑ رہے ہیں۔

دراصل ’آج تک‘ کے ایک پروگرام میں جب آشوتوش شرما سے سوال کیا گیا کہ ان کی پارٹی یوگی آدتیہ ناتھ اور بی جے پی سے لڑنے کے لیے کیا تیاری کر رہی ہے، تو جواب میں انھوں نے کہا کہ ’’یوگی جی سے لڑنے کی ضرورت نہیں ہے۔ بی جے پی میں آپس میں ہی جوتم پیجار چل رہا ہے، یہ خود ہی آپس میں لڑ مریں گے۔‘‘ ساتھ ہی پروگرام میں موجود بی جے پی ترجمان سمبت پاترا سے آشوتوش نے یہ سوال بھی کر دیا کہ ’’آپ کب معافی مانگیں گے ان لوگوں سے جن کی موت آکسیجن کی کمی کے سبب ہو گئی؟‘‘

واضح رہے کہ اتر پردیش کی سیاست میں اس وقت اتھل پتھل کا ماحول دیکھنے کو مل رہا ہے۔ اتر پردیش بی جے پی کے کئی لیڈران مرکزی قیادت سے ملاقات کر چکے ہیں اور ایسا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے کہ جلد ہی یوگی کابینہ میں رد و بدل ہو سکتا ہے۔ حالانکہ اس سلسلے میں ابھی تک کچھ بھی صاف نہیں ہو سکا ہے کہ تبدیلی کس طرح کی ہوگی۔ اتر پردیش کے وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ 10 جون کو دہلی پہنچ چکے ہیں اور ان کی ملاقات امت شاہ سے بھی طے ہے۔ اب دیکھنے والی بات یہ ہوگی کہ بی جے پی کے اندر مچی ہلچل پر کس طرح قابو پایا جاتا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔