طالبان کا بدلا ہوا رخ خوش آئند، امید ہے کہ وہ اپنے وعدوں کو پورا کریں گے، سری لنکا

سری لنکا نے امید ظاہر کی ہے کہ طالبان عام معافی دینے، خواتین کے حقوق کی حفاظت کرنے اور کسی بھی غیر ملکی کو نقصان نہیں پہنچانے کے اپنے وعدوں پر قائم رہے گا

افغان طالبان / آئی اے این ایس
افغان طالبان / آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

کولمبو: افغانستان پر طالبان کے قبضہ کے بعد ہندوستان کے ایک اور پڑوسی ملک سری لنکا نے بیان دیتے ہوئے امید ظاہر کی ہے کہ طالبان اپنے وعدوں پر کھرا اترے گا۔ سری لنکا نے طالبان کے بدلے ہوئے نرم رخ کا خیر مقدم کیا ہے۔ پاکستان کی جانب سے بھی طالبان کے تسلط کا خیر مقدم کیا جا چکا ہے۔

ایک رپورٹ کے مطابق سری لنکا نے امید ظاہر کی ہے کہ افغانستان پر قبضہ کے بعد طالبان عام معافی دینے، خواتین کے حقوق کی حفاظت کرنے اور کسی بھی غیر ملکی کو نقصان نہیں پہنچانے کے اپنے وعدوں پر قائم رہے گا۔ طالبان نے حال ہی میں پریس کانفرنس کر کے خواتین کو حقوق فراہم کرنے، میڈیا کی آزادی کا احترام کرنے اور گزشتہ حکومت کی حمایت کرنے والوں کو معاف کر دینے کا وعدہ کیا تھا۔ طالبان نے بھی وعدہ کیا تھا کہ ان کے دور اقتدار میں افغانستان کو دہشت گردوں کی پناہ گاہ نہیں بننے دیا جائے گا۔


طالبان کے اس بدلے ہوئے رخ سے دنیا حیران رہ گئی تھی اور اسی ضمن میں سری لنکا کا بیان بھی سامنے آیا ہے۔ سری لنکا کی طرف سے یہ بھی کہا گیا ہے کہ افغانستان میں اس کے جو شہری پھنسے ہوئے ہیں انہیں نکالنے کے لئے امریکہ، برطانکہ، ہندوستان، پاکستان اور اقوام متحدہ مدد کریں۔

طالبان کی طرف سے افغانستان پر کنٹرول کرنے کے بعد اپنے پہلے رد عمل میں سری لنکا کی وزارت خارجہ نے امید ظاہر کی ہے کہ تحریک طالبان کے اقتدار سنبھالنے کے بعد کئے گئے اپنے وعدوں کا احترام کرے گا۔ وزارت نے ایک بیان میں کہا، ’’سری لنکا یہ جان کر خوش ہے کہ طالبان نے عام معافی کی پیش کش کی ہے اور کسی بھی غیر ملکی شہری کو نقصان نہیں پہنچانے کا وعدہ کیا ہے۔ ایسے ہم طالبان سے اپنے وعدوں کو نبھانے کی اپیل کرتے ہیں۔‘‘

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔