دھاراوی میں کورونا متاثرین کی تعداد میں تیزی سے تخفیف

تقریباً 90 فیصد کورونا متاثرین کا علاج دھاراوی میں ہی کیا گیا اور محض سنگین طور پر بیمار مریضوں کو ہی باہر کے اسپتال میں داخل کروایا گیا۔

سوشل میڈیا
سوشل میڈیا
user

یو این آئی

ممبئی کی گھنی آبادی والی جھگی بستی دھاراوی میں کورونا وائرس (کووِڈ۔19) سے متاثرہ کیسز میں اس ماہ تیزی سے تخفیف ہوئی ہے اور ساتھ ہی متاثرین کے کیسز کے دوگنا ہونے کا وقت بھی 23 دن سے بڑھ کر 78 دن ہو گیا ہے۔

صحت اور خاندانی فلاح و بہبود کی وزارت نے دھاراوی میں کورونا وائرس کے کیسز میں آئی کمی کے لیے ریاستی حکومت اور برہن ممبئی میونسپل کارپوریشن (بی ایم سی) کی تعریف کرتے ہوئے اتوار کو کہا کہ انہوں نے مرکزی حکومت کی ہدایات پر عمل درآمد کیا ہے جس سے دھاراوی میں اچھے اور مؤثر نتائج سامنے آئے ہیں۔

فی مربع کلومیٹر 227136 افراد کی آبادی والی جھگی بستی دھاراوی کے 80 فیصد افراد کمیونٹی ٹوائیلیٹ کا استعمال کرتے ہیں۔ اپریل میں یہاں کورونا کے 491 کیسز سامنے آئے تھے اور کیسز کے دوگنا ہونے کا وقت محض 18 دن تھا۔ یہاں اس وقت کووِڈ۔19 12 فیصد کی رفتار سے بڑھ رہا تھا لیکن مئی میں یہ کم ہو کر 4.3 اور جون میں محض 1.02 فیصد رہ گیا۔

دھاراوی میں مئی میں وائرس کے یومیہ 43 کیسز سامنے آ رہے تھے جو جون کے تیسرے ہفتے میں گھٹ کر 19 رہ گئے۔ کورونا وائرس کے کیسز دوگنا ہونے کا وقت بھی مئی کے43 دن سے بڑھ کر 78 دن ہو گیا ہے۔

وائرس پر قابو پانے کے لیے بی ایم سی کے صحت اہلکار نے 476775 اور ڈاکٹر اور پرائیویٹ اسپتالوں نے 47500 افراد کی اور موبائل وین کے ذریعے قریب 14970 افراد کی اسکریننگ کی گئی۔ بزرگوں کے لیے الگ سے کلینک قائم کیے گئے۔ اس طرح یہاں تقریباً 548270 افراد کی اسکریننگ ہوئی ہے۔ تقریباً 90 فیصد کورونا متاثرین کا علاج دھاراوی میں ہی کیا گیا اور محض سنگین طور پر بیمار مریضوں کو ہی باہر کے اسپتال میں داخل کروایا گیا۔

next