اتر پردیش میں مافیا اب دوربین سے بھی نظرنہیں آتا، امت شاہ کا دعویٰ

امت شاہ نے کہا کہ سابقہ حکومتوں نے امن و امان کا بیڑا غرق کر رکھا تھا جبکہ آج یوپی میں ترقی کی لہر ہے اور مافیا اور ناپسندیدہ عناصر دوربین سے بھی نظر نہیں آتے

تصویر ٹوئٹر
تصویر ٹوئٹر
user

یو این آئی

لکھنؤ: اتر پردیش میں ایک بار پھر اکثریت کے ساتھ حکومت بنانے کا یقین ظاہر کرتے ہوئے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے سابق صدر اور مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے کہا کہ سابقہ حکومتوں نے امن و امان کا بیڑا غرق کر رکھا تھا جبکہ آج یوپی میں ترقی کی لہر ہے اور مافیا اور ناپسندیدہ عناصر دوربین سے بھی نظر نہیں آتے۔

ڈیفنس ایکسپو گراؤنڈ ورنداون یوجنا میں 'میراپریوار-بھاجپا پریوار' کی رکنیت مہم کا آغاز کرتے ہوئے امت شاہ نے جمعہ کو کہا کہ ریاست کی یوگی حکومت نے اپنے اب تک کے دورمیں 90 فیصد وعدوں کو پورا کیا ہے اور بقیہ وعدہ دوماہ میں صد فیصد پوراکرلیا جائے گا۔


انہوں نے کہا کہ یوپی میں سماج وادی پارٹی (ایس پی) اور بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) کا کھیل برسوں جاری رہا۔ یہاں امن و امان کی حالت دیکھ کر ان کا خون کھولتا تھا۔ کیرانہ سے لوگ ہجرت کرگئےلیکن آج خود ہجرت کرانے والے ہجرت کرگئے۔ مافیا اب دوربین سے بھی نظر نہیں آتا۔ یہ تبدیلی صرف بی جے پی ہی کر سکتی ہے۔ انہوں نے یقین ظاہر کیا کہ یوپی 2022 میں دوبارہ 2017 کو دہراتے ہوئے 300 کو عبور کرنے کا ہدف حاصل کرے گی۔

امت شاہ نے کہا، "یوپی نے دو بار مہربانی کی، تب مرکز میں حکومت بنی، اس کا سہرا یوپی کے عظیم لوگوں کے سر جاتا ہے۔ مودی جی آپ کے ووٹ کی قیمت کو تین گنا کرکے واپس کرتےہیں۔

انہوں نے کہا، ’’کسی کو امید تھی کہ یوپی میں مندر بنے گا، لیکن اب بن گیا۔ اکھلیش کہتے تھے کہ مندر بنائیں گے لیکن تاریخ نہیں بتائیں گے، لیکن اکھلیش بابومندر کی بنیاد بھی پڑ گئی آپ توپانچ ہزار روپے عطیہ بھی نہیں دے پائے۔ کشمیر میں بھی 370 ہٹانا ایک خواب تھا لیکن 2019 میں یہ خواب بھی پوراہوگیا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔