قانون کو 'کچلنے' والی یوگی حکومت کے دن اب محض گنتی کے: اکھلیش

اکھلیش یادو نے کہا کہ مرکزی حکومت پانچ ٹریلین ڈالر کی اکانومی کی بات کہہ رہے تھی تو یوپی کے نقل چی وزیر اعلی نے بھی ایک ٹریلین معیشت کا وعدہ کرلیا مگر نتیجہ صفر ہے۔

اکھلیش یادو، تصویر یو این آئی
اکھلیش یادو، تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

سہارنپور: مغربی اترپردیش میں اسمبلی انتخابات کا بگل پھونکتے ہوئے سماج وادی پارٹی (ایس پی) سربراہ اکھلیش یادو نے کہا کہ کسانوں کو ٹائروں کے نیچے کچلنے اور ان کی تذلیل کرنے والی بی جے پی کی حکومت کے دن اب محض گنتی کے رہ گئے ہیں۔

چودھری یش پال کی جینتی کے موقع پر منعقد عوامی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے اکھلیش یادو نے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ پر براہ راست حملہ کرتے ہوئے کہا کہ 'یوگی اس کو بولتے ہیں جو دوسروں کے دکھ درد کو اپنا سمجھے۔ مگر وزیر اعلی یوگی اور ان کے لوگوں کے کارناموں کو لکھیم پور میں لوگوں نے دیکھا ہے، جہاں گاڑیوں کے ٹائروں سے کسانوں کو کچلا گیا۔ قانون کو بھی کچلنے کی تیاری تھی۔ انہیں دی نہیں لگے گی جب وہ آئین کو بھی کچل دیں گے۔


انہوں نے کہا کہ 'کسان ہمیں اناج دیتے ہیں وہ ہمارا پیٹ بھرتا ہے۔ ہمیں پہننے کو کپڑے دیتا ہے۔ موجودہ حکومت میں حالانکہ اسے رسوائی کا سامنا ہے۔ کسان اپنے حق کی لڑائی لڑ رہے ہیں اور یہ حکومت ان کو 'موالی' کہہ رہی ہے۔ ان کی بس چلے تو دہشت گرد کہہ دیں۔ بی جے پی کی رسوائی کے باوجود کسان پیچھے ہٹنے کو تیار نہیں ہیں۔ وہ گدی پر بیٹھانا بھی جانتے ہیں اور اتارنا بھی جانتے ہیں'۔

اکھلیش یادو نے کہا کہ مرکزی حکومت پانچ ٹریلین ڈالر کی اکانومی کی بات کہہ رہے تھی تو یوپی کے نقل چی وزیر اعلی نے بھی ایک ٹریلین معیشت کا وعدہ کرلیا مگر نتیجہ صفر ہے۔ کسانوں کے لئے بجلی کے میٹر بھی لگ گئے اور تیز بھی بھاگنے لگے۔ بل بڑھا دئیے گئے۔ کمرتوڑ مہنگائی سے بے حال کسانوں کو 500 روپئے دئیے جانے لگے مگر کیا یہ احترام کی بات ہے۔ حقیقت میں انتخاب سے پہلے اکاونٹ میں پیسے بھیج کر حکومت کسانوں کو دھوکہ دینے کا کام کر رہی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔