قومی

تلنگانہ کا نوجوان سعودی عرب میں ایجنٹ کی دھوکہ دہی کا شکار

ویڈیو پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے تارک راما راؤ نے سعودی عرب میں ہندوستانی سفیر اوصاف سعید اور ریاض میں ہندوستانی سفارت خانہ کو ٹوئٹ کرتے ہوئے اس نوجوان کی ہندوستان واپسی کے لئے مدد کرنے کی خواہش کی ہے۔

علامتی تصویر

یو این آئی

حیدرآباد: تلنگانہ سے تعلق رکھنے والا ایک نوجوان سعودی عرب میں ایجنٹ کی دھوکہ دہی کا شکار ہوگیا جہاں اس کو کئی مسائل کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ اس 21 سالہ نوجوان محمد سمیر نے جس کا تعلق ضلع کریم نگر کے ایلنتوکنٹہ سے ہے، ایک ویڈیو پیغام سوشیل میڈیا کے ذریعہ تلنگانہ کی حکمران جماعت ٹی آر ایس کے کارگزار صدر کے تارک راماراؤ کو بھیجا۔

تلگو زبان میں بھیجے گئے اس ویڈیو میں اس نوجوان نے اپنی مشکلات سے تارک راما راؤ کو واقف کروایا۔ یہ نوجوان روزگار کے لئے ایجنٹ کے ذریعہ سعودی عرب گیا تھا۔ اس نوجوان نے کہا کہ سعودی عرب میں فنکشن ہال میں ملازمت کا جھانسہ ضلع نظام آباد سے تعلق رکھنے والے ایجنٹ نے دیا۔ اس نوجوان نے امید کی تھی کہ ملازمت پر اس کے معاشی مسائل دور ہوں گے۔ اس نے ملازمت کے لئے ایجنٹ کو 80 ہزار روپئے بھی دیئے تاہم اس نوجوان کی سعودی عرب روانگی کے بعد وہاں اس کو دھوکہ کا سامنا کرنا پڑا اور وہاں اسے بکریاں چرانے کا کام دیا گیا۔ اس نوجوان نے اس کو بچانے اور ملک واپسی میں مدد کی خواہش کی۔

اس ویڈیو پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے تارک راما راؤ نے سعودی عرب میں ہندوستانی سفیر اوصاف سعید اور ریاض میں ہندوستانی سفارت خانہ کو ٹوئٹ کرتے ہوئے اس نوجوان کی ہندوستان واپسی کے لئے مد د کرنے کی خواہش کی۔ واضح رہے کہ ایک اور نوجوان نے بھی گزشتہ روز ایسا ہی ویڈیو تارک راماراؤ کو بھیجا تھا۔