تمل ناڈو: درجہ ایک سے ہشتم تک کے طلبا کے لیے خوشخبری، سبھی کو کیا گیا پاس

وزیر تعلیم نے بتایا کہ بارہویں کے امتحانات کرانے کا فیصلہ سی بی ایس ای امتحانات کی بنیاد پر کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ توقع ہے کہ سی بی ایس ای امتحانات کے انعقاد کا اعلان دو دنوں میں کر دیا جائے گا۔

تصویر آئی اے این ایس
تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

چنئی: حکومت تمل ناڈو نے منگل کے روز کورونا وائرس کی وجہ سے درجہ ایک سے درجہ ہشتم کے تمام طلبہ کو تعلیمی سیشن 2020-21 کا اختتامی امتحان لئے بغیر پاس یا ترقی دینے کا اعلان کیا۔ یہ اعلان تمام سرکاری، سرکاری امداد یافتہ، غیر اعانت یافتہ ریاستی بورڈ کے اسکولوں پر نافذ ہوگا۔ ڈائریکٹر ایلیمینٹری ایجوکیشن آف تامل ناڈو نے بتایا کہ ریاستی بورڈ کے ماتحت تمام اسکولوں میں درجہ ایک سے آٹھویں تک کے طلبہ کو اگلے درجے میں ترقی دے دی گئی ہے۔ سرکلر میں کہا گیا ہے کہ کسی بھی طالب علم کو اسکول سے نہیں نکالا جانا چاہیے۔

ڈائریکٹر ایجوکیشن نے کہا کہ حکام کو چاہیے کہ وہ اپنے دائرہ اختیار کے اسٹیٹ بورڈ کے تمام سرکاری، سرکاری امداد یافتہ اور پرائیویٹ اسکولوں کو ایک سے آٹھویں جماعت تک کے طلبہ کو پاس کرنے اور اسکول کے رجسٹر میں تمام طلبہ کے نام درج کرنے کے لئے مطلع کریں۔ محکمہ نے یہ بھی کہا کہ اسکولوں کو دوبارہ کھولنے اور مفت درسی کتب کی تقسیم کے فیصلے کا اعلان جلد ہی کیا جائے گا۔


دریں اثناء، وزیر تعلیم انبیل پوریا موجھی نے وزیر اعلی ایم کے اسٹالن سے پلس ٹو بورڈ (بارہویں) کے امتحانات کے انعقاد پر تبادلہ خیال کیا۔ ریاستی سکریٹریٹ میں منعقدہ میٹنگ میں تمام اعلی حکام نے شرکت کی۔ اجلاس کے بعد وزیر تعلیم نے صحافیوں کو بتایا کہ بارہویں کے امتحانات کرانے کا فیصلہ سی بی ایس ای کے امتحانات کی بنیاد پر کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ توقع ہے کہ سی بی ایس ای امتحانات کے انعقاد کا اعلان دو دنوں میں کردیا جائے گا۔ قابل ذکر ہے کہ ریاستی حکومت نے پہلے ہی نویں، دسویں اور گیارہویں جماعت کے طلبہ کو بغیر کسی امتحان کے ترقی دینے کا اعلان کیا تھا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔