یاسین ملک پر پی ایس اے عائد کئے جانے کے خلاف مائسمہ اور محلقہ علاقوں میں ہڑتال

لبریشن فرنٹ کے چیئرمین محمد یاسین ملک پر پبلک سیفٹی ایکٹ عائد کرنے کے خلاف شہر سری نگر کے مائسمہ اور ملحقہ علاقوں میں جمعرات کے روز مکمل ہڑتال رہی۔

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

سری نگر: لبریشن فرنٹ کے چیئرمین محمد یاسین ملک پر پبلک سیفٹی ایکٹ عائد کرنے کے خلاف شہر سری نگر کے مائسمہ اور ملحقہ علاقوں میں جمعرات کے روز مکمل ہڑتال رہی۔

یو این آئی کے نامہ نگار کے مطابق یاسین ملک پر پبلک سیفٹی ایکٹ عئد کرنے کے خلاف ہڑتال کی وجہ سے مائسمہ علاقے میں تمام دکانیں بند اور دیگر تجارتی سرگرمیاں مفلوج ہوکر رہ گئی۔ انہوں نے بتایا کہ علاوہ ازیں گاؤکدل، کوکر بازار،،ریڈ کراس روڑ اور بڈشاہ چوک میں بھی ہڑتال رہی اور تجارتی مرکز لالچوک میں بھی جزوی ہڑتال رہی۔

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی

ریاستی پولیس نے لبریشن فرنٹ چیئرمین یاسین ملک کو گذشتہ ماہ (فروری) کی 22 تاریخ کو حراست میں لیکر پولیس تھانہ کوٹھی باغ میں مقید کردیا تھا۔ فرنٹ ترجمان کے مطابق ملک کو جمعرات کی صبح بتایا گیا کہ ان پر پی ایس اے عائد کیا گیا ہے اور انہیں کوٹ بلوال جیل جموں منتقل کیا جائے گا۔

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی

دریں اثنا حریت کانفرنس ( ع) کے چیر مین میر واعظ عمر فاروق نے لبریشن فرنٹ چیئرمین محمد یاسین ملک پر پبلک سیفٹی ایکٹ عائد کرنے کی سخت الفاظ میں مذمت کی ہے۔ انہوں نے اپنے ایک ٹویٹ میں کہا کہ ان غیر جمہوری حربوں سے قائدین وعوام کو مسئلہ کشمیر کا حل عوام کی امنگوں کے مطابق تلاش کرنے کی جدوجہد سے باز نہیں رکھا جاسکتا۔