مہاراشٹر کے اورنگ آباد میں آدتیہ ٹھاکرے کے قافلہ پر پتھراؤ، شندے دھڑے پر حملہ کا الزام

مہاراشٹر قانون ساز کونسل میں قائد حزب اختلاف امباداس دانوے نے الزام عائد کیا کہ آدتیہ ٹھاکرے کی کار پر حملہ شیو سینا سے علیحدہ ہونے والے شندے دھڑے کے کارکنان نے کیا ہے

<div class="paragraphs"><p>تصویر سوشل میڈیا</p></div>

تصویر سوشل میڈیا

user

قومی آوازبیورو

ممبئی: مہاراشٹر کے اورنگ آباد کے بیجاپور علاقے میں شیوسینا (یو بی ٹی) کے رہنما آدتیہ ٹھاکرے کے قافلے پر پتھراؤ کیا گیا ہے۔ یہ یہ پتھراؤ شیوسینا کی ’شیو سمواد یاترا‘ کے دوران کیا گیا۔ رپورٹ کے مطابق پارٹی لیڈر آدتیہ ٹھاکرے اور امباداس دانوے کی گاڑی کے سامنے کچھ لوگوں نے ہنگامہ کیا اور پھر پتھراؤ کر یا۔ غنیمت یہ رہی کہ پتھراؤ میں آدتیہ ٹھاکرے کو کوئی چوٹ نہیں آئی۔

مہاراشٹر قانون ساز کونسل میں قائد حزب اختلاف امباداس دانوے نے الزام عائد کیا کہ آدتیہ ٹھاکرے کی کار پر حملہ شیو سینا سے علیحدہ ہونے والے شندے دھڑے کے کارکنان نے کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پتھر بازی کے واقعہ کے پیچھے اورنگ آباد کے مقامی ایم ایل اے کا ہاتھ ہے۔ دانوے نے ایک ویڈیو جاری کرتے ہوئے کہا کہ بیجاپور میں منعقدہ میٹنگ میں خلل ڈالنے کی کوشش کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ریاستی حکومت آدتیہ ٹھاکرے کی حفاظت میں لاپرواہی برت رہی ہے۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ یہ ہندو اور دلت سماج کے درمیان تقسیم پیدا کرنے کے لیے کیا گیا ہے۔


امباداس دانوے نے آدتیہ ٹھاکرے کی تقریب میں سیکورٹی کی خلاف ورزی کے تعلق سے مہاراشٹر کے پولیس ڈائریکٹر جنرل کو ایک خط لکھا ہے۔ دانوے نے ڈی جی پی سے اس خلاف ورزی کی سنجیدگی سے تحقیقات کرنے اور ضروری کارروائی کرنے کی درخواست کی ہے۔

خیال رہے کہ آدتیہ ٹھاکرے نے پیر کو پارٹی کی 'شیو سمواد' یاترا کے ساتویں مرحلے کا آغاز کیا۔ اس یاترا کے دوران آدتیہ ٹھاکرے مراٹھواڑہ کے 3 اضلاع کا دورہ کریں گے۔ پارٹی کے جاری کردہ ایک بیان کے مطابق، آدتیہ ٹھاکرے دن کے وقت مُبدھیگاؤں، وڈگاؤں پنگلا، سنار اور پالسے گاؤں کا دورہ کریں گے اور پھر ناسک میں پارٹی کی میٹنگ سے خطاب کریں گے۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


;