ریاستیں چاہیں تو جرمانہ پر نظر ثانی کرسکتی ہیں: گڈکری

ریاستوں میں موٹر گاڑیوں پر جرمانہ کے تعلق سے جاری بحث ومباحثہ کے بیچ ٹرانسپورٹ کے وزیر نتن گڈکری نے آج کہاکہ ریاستیں چاہیں تو جرمانہ پر نظر ثانی کرسکتی ہیں اور انھیں اس کے تعلق سے پریشانی نہیں ہے۔

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی

یو این آئی

نئی دہلی: ریاستوں میں موٹر گاڑیوں پر جرمانہ کے تعلق سے جاری بحث ومباحثہ کے بیچ ٹرانسپورٹ کے وزیر نتن گڈکری نے آج کہاکہ ریاستیں چاہیں تو جرمانہ پر نظر ثانی کرسکتی ہیں اور انھیں اس کے تعلق سے پریشانی نہیں ہے۔

گڈکری نے صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ ریاستیں چاہیں تو جرمانہ میں تبدیلی کرسکتی ہیں لیکن لوگوں کی زندگی محفوظ ہونی چاہئے ۔ٹریفک جرمانہ کی رقم بڑھانے پر انھوں نے کہاکہ یہ آمدنی بڑھانے کی اسکیم نہیں ہے۔

انھوں نے سوال کیا کہ آپ ڈیڑھ لاکھ لوگوں کی موت سے تشویش میں مبتلا نہیں ہیں ۔لوگوں کو قانون کا احترام کرنا چاہئے اور ان میں قانون کا خوف بھی ہونا چاہئے۔ انھوں نے کہاکہ آمدنی بڑھانا حکومت کا مقصد نہیں ہے ۔اس کا مقصد سڑک کو محفوظ بناناہے اور حادثات کو کم کرنا ہے ۔انھوں نے سوال کیاکہ کسی کی زندگی سے جرمانہ اہم ہے کیا۔لوگ ضابطہ نہیں توڑیں گے تو جرمانہ نہیں لگے گا۔

دریں اثنا اوڈیشہ کے وزیرا علی نوین پٹنائک نے کہاہے کہ ریاست میں نئے جرمانہ کے پروویژن کو نافذ کرنے کے لیے لوگوں کو تین ماہ کی مہلت دی جانی چاہئے۔ بھارتیہ جنتاپارٹی کی حکمرانی والی ریاست گجرات کے وزیرا علی وجے روپانی نے کہاہے کہ مرکزی ٹریفک جرمانہ کو کم کیاجاناچاہئے اور ریاستی حکومت 16ستمبر کو جرمانہ کی نئی شرحوں کا اعلان کریگی ۔