یوپی کے عوام کے پاس ایس پی ہی واحد متبادل:ماتا پرساد پانڈے

ایس پی کی عوامی حمایت میں اضافہ ہوا ہے، جس کی وجہ سے اپوزیشن پوری طرح سے بے چین ہے، انہیں سمجھ نہیں آرہا کہ وہ سماج وادی پارٹی سے کیسے مقابلہ کریں گے۔

فائل تصویر آئی اے این ایس
فائل تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

سماج وادی پارٹی(ایس پی)کے سینئر لیڈر و سابق اسمبلی اسپیکر ماتا پرساد پانڈے نے دعوی کیا کہ بی جے پی حکومت کے جھوٹے وعدوں سے مایوس ہوچکے یوپی کے عوام کے پاس سماج وادی پارٹی(ایس پی) ہی واحد متبادل ہے۔

پانڈے نے یواین آئی کے ساتھ بات چیت میں کہا، "بی جے پی کے جھوٹے وعدوں سے یوپی کے عوام پوری طرح مایوس ہو چکے ہیں اور ان کے لیڈر، ایم ایل اے مایوس ہو کر سماج وادی پارٹی میں شامل ہو رہے ہیں۔ مرکزی اور ریاستی حکومت سے عوام پوری طرح بیزار ہیں۔ کسان اور نوجوان پریشان ہیں۔ ریاست میں، خاص طور پر چھوٹے کسانوں سے، ان کا دھان مقررہ وقت کے اندر نہیں خریدا گیا اور وہ اپنی پیداوار سستے داموں بیچنے کو مجبور ہوئے۔


انہوں نے کہا کہ بی جے پی کے ایم ایل اے اور وزراء بھی جھوٹے وعدوں سے تنگ ہیں اور استعفیٰ دے رہے ہیں اور ایس پی کی رکنیت حاصل کررہے ہیں ۔سماج وادی پارٹی کی حکومت کو عوام یاد کر رہے ہیں۔ پانڈے نے دعویٰ کیا کہ ان کی پارٹی اسمبلی انتخابات میں زیادہ سے زیادہ سیٹیں جیت کر مکمل اکثریت کے ساتھ حکومت بنائے گی اور ملک کو آگے لے جانے میں مدد کرے گی۔

سابق اسپیکر نے کہا کہ ایس پی کی عوامی حمایت میں اضافہ ہوا ہے، جس کی وجہ سے اپوزیشن پوری طرح سے بے چین ہے، انہیں سمجھ نہیں آرہا کہ وہ سماج وادی پارٹی سے کیسے مقابلہ کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ٹکٹوں کی تقسیم پارٹی کرے گی۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔