امول کا پلانٹ لگانے کا فیصلہ ایس پی حکومت کا، عمل آوری میں تاخیر ہوئی: اکھلیش

اتر پردیش میں ترقیاتی کاموں کا کریڈٹ لینے کے سلسلے میں یوگی حکومت اور اپوایشن جماعت سماجو ادی پارٹی (ایس پی) سربراہ اکھلیش یادو کے درمیان زبانی جنگ فی الحال رکتی نہیں دکھائی دے رہی ہے

اکھیلیش یادو کی فائل تصویر یو این آئی
اکھیلیش یادو کی فائل تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

لکھنؤ: اتر پردیش میں ترقیاتی کاموں کا کریڈٹ لینے کے سلسلے میں یوگی حکومت اور اپوایشن جماعت سماجو ادی پارٹی(ایس پی) سربراہ اکھلیش یادو کے درمیان زبانی جنگ فی الحال رکتی نہیں دکھائی دے رہی ہے۔

یوگی حکومت کے ترقیاتی کاموں کو ایس پی حکومت کے میعاد کے کام بتا رہے اکھلیش نے جمعرات کو وزیر اعظم نریندر مودی کے ذریعہ وارانسی میں کئے گئے امول ڈیری پلانٹ کے سنگ بنیاد کو بھی ایس پی میعاد کار کا فیصلہ قرار دیا۔

اکھلیش یادو نے کہا کہ وارانسی ہی نہیں بلکہ لکھنؤ اور کانپور میں بھی ایس پی حکومت نے امول ڈیری پلانٹ لگانے کا فیصلہ کیا تھا۔ انہوں نے الزام لگایا کہ بی جے پی کی یوگی حکومت نے اس پر عمل آوری میں تاخیر کی ہے۔


اکھلیش نے ٹوئٹ کر کے کہا’ ایس پی کے وقت لکھنؤ،کانپور اور بنارس میں امول پلانٹ لگانے کا جو فیصلہ کیا تھا اس پر عمل درآمد میں بی جے پی حکومت نے پورا میعاد کار گذار دیا۔ ’قینچی جیوی، بی جے پی اس حقیقت سے چشم پوشی کرے گی لیکن کوئی امو ل کمپنی سے پوچھے تو وہ دودھ جیسا یہ سفید سچ بتائے گی۔ یوپی کہے آج کا، نہیں چاہئے بھاجپا‘۔

قابل ذکر ہے کہ وزیر اعظم مودی نے کل ہی وارانسی میں امول کوآپریٹیو ادارے کے تحت بننے والے ’بناس ڈیری پلانٹ‘ کا سنگ بنیاد رکھا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔